کینیڈا میں مقیم پاکستانیوں نے ڈیم فنڈ میں عطیات دیکر یوم پاکستان منایا

پبلک نیوز: کینیڈا میں مقیم پاکستانیوں کا یوم پاکستان منانے کا منفرد انداز، ڈیم فنڈ میں عطیات دیکر وطن سے محبت کا اظہار کیا۔ سینیٹر فیصل جاوید اور سابق چیف جسٹس ثاقب نثار کی فنڈ ریزنگ تقریب میں شرکت۔

تفصیلات کے مطابق تقریب کینیڈا کے شہر کلرجی میں منعقد کی گئی۔ اس سے پہلے مونٹریال، ٹورنٹو اور اوٹاوہ میں بھی ایسی تقریبات ہوچکی ہیں۔ کلرجی میں منعقدہ تقریب میں 425,786 ڈالرز کے عطیات جمع ہوئے۔ تقریب میں وزیر اعظم عمران خان کے دستخط شدہ بلے 30000 اور 35000 ڈالرز میں نیلام ہوئے۔ ملک حفیظ اور لالہ عارف وڑائچ نے بلے خریدے۔

سینیٹر فیصل جاوید خان کا کہنا تھا کہ کینیڈا میں اب تک بیس لاکھ ڈالرز سے زائد کی رقم جمع ہوچکی ہے۔ پینتالیس، پچاس سال سے پاکستان میں کوئی ڈیم نہیں بنا۔ ڈیم کے مسئلے پر آگاہی جسٹس ثاقب نثار کا کریڈٹ ہے۔ بہت جلد دو ڈیموں پر کام شروع ہو جائے گا۔ ہمارے پاس صرف دو بڑے ڈیم ہیں۔

انھوں نے کہا کہ پاکستان کے پاس صرف ایک مہینہ پانی کا ذخیرہ ہے۔  بیرون ملک پاکستانیوں کے تعاون سے یہ ڈیم بنائیں گے۔ پاکستان کا بیانیہ امن کا بیانیہ ہے۔ پاکستان نے دنیا کے امن کے لئے قربانیاں دی ہیں۔ کرتار پور باردڈر پر کام ہو رہا ہے۔

سینیٹر فیصل جاوید نے پاکستانیوں کو 23 مارچ کی مبارکباد دی اور کہا کہ پاکستان میں آنے والی نسلوں کے لیے یہ ڈیم بہت ضروری ہے۔ سابق چیف جسٹس اور وزیراعظم عمران خان خراج تحسین کے مستحق ہیں۔ وزیراعظم عمران خان پر لوگ پیسوں سے اعتبار کرتے ہیں۔

سابق چیف جسٹس میاں ثاقب نثار نے کہا کہ سپریم کورٹ کے فیصلے کے بعد ڈیم تعمیر کو روکا نہیں جاسکتا۔ سپریم کورٹ احکامات کو ماننا سول اور فوجی اداروں پر لازم ہے۔ وزیراعظم عمران خان کی دیانت داری پر کوئی شبہ نہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ لیکن اس کے باوجود ڈیم فنڈ کے استعمال کا طریقہ بہت محفوظ بنایا گیا ہے۔ میں گلگت بلتستان کے لوگوں کو خراج تحسین پیش کرتا ہوں۔ کیونکہ ڈیم ان کی زمینوں پر بننا ہے، ان کی قربانی سب سے بڑی ہے۔

احمد علی کیف  3 ماه پہلے

متعلقہ خبریں