مساجد پر حملہ: شہید ہونے والے پاکستانی شہری نعیم راشد عالمی میڈیا پر ہیرو قرار

کرائسٹ چرچ(پبلک نیوز) نیوزی لینڈ میں مساجد پر حملہ آور کو روکنے کی کوشش کرنے والے پاکستانی شہری نعیم راشد اور ان کا بیٹا طلحہٰ نعیم مزاحمت کے دوران شہید ہو گئے۔ پاکستانی نعیم راشد کو ہیرو قرار دے دیا گیا۔


عالمی میڈیا نے نیوزی لینڈ میں مساجد پر دہشت گرد حملے میں دوسروں کی جان بچانے کی کوشش میں شہید ہونے والے پاکستانی نعیم راشد کو ہیرو قرار دے دیا۔ نعیم راشد نے دوسروں کی جان بچانے کی کوشش میں اپنی جان قربان کر دی۔ عینی شاہد نے بتایا کہ نعیم راشد نے اپنی جان کی پرواہ نہ کرتے ہوئے حملہ آور کو قابو کرنے کی کوشش کی اور اپنی جان قربان کر دی۔ عینی شاہد مظہرالدین نے بتایا کہ نعیم راشد نے حملہ آور کو قابو کر کے اس کی گن چھین لی تھی، لیکن انہیں گن چلانا نہیں آتی تھی۔

 

حملہ آور اپنی گن چھوڑ کر گاڑی میں موجود اپنے دیگر ساتھیوں کی جانب بھاگا۔ نعیم راشد حملہ آور کو قابو کرنے کی کوشش میں زخمی ہوئے اور ہسپتال پہنچ کر دم توڑ گئے۔ دل دہلا دینے والے واقعے میں نعیم راشد کے بیٹے بھی گولیوں کی زد میں آکر شہید ہوئے۔ نعیم راشد اور ان کے بیٹے طلحہ کا تعلق پاکستان کے شہر ایبٹ آباد سے ہے۔ نعیم راشد نیوزی لینڈ میں ٹیچر تھے۔ انہوں نے انسانیت کا سبق صرف پڑھایا نہیں بلکہ نبھایا بھی۔

عطاء سبحانی  2 ماه پہلے

متعلقہ خبریں