کراچی:ینگ ڈاکٹرز کے احتجاج کا تیسرہ روز،مریضوں کو شدید مشکلات کا سامنا

کراچی(پبلک نیوز) سندھ بھر کے ہسپتالوں میں ینگ ڈاکٹرز کی جانب سے تیسرے روز بھی او پی ڈیز کا بائی کاٹ رہا، ڈاکٹرز کا کہنا ہیں کہ مطالبات تسلیم کیے جانے کا صرف دعویٰ ہی کیا گیا۔ نوٹیفکیشن جاری نہیں ہوا، اگر مطالبات تسلیم کر کے نوٹیفکیشن جاری نہ کیا گیا تو سخت لائحہ عمل اختیار کریں گے

 

سندھ بھر کی طرح شہر قائد میں بھی ڈاکٹرز کی بے حسی کی فضا قائم رہی اور احتجاج تیسرے روز میں داخل ہوگیا، تیسرے روز بھی پلے کارڈ ہاتھ میں لئے ڈاکٹرز سندھ حکومت کے خلاف نعرے لگانے میں مصروف دکھائی دیئے۔ تین روز سے سندھ بھ کے ینگ ڈاکٹرز ایسوسی ایشن سراپا احتجاج ہیں۔ گزشتہ روز سیکٹری ھیلتھ، مشیر اطلاعات اور کمشنر کراچی نے وائے ڈی اے کے وفد کو طلب کیا لیکن مزاکرات طے نہ ہو سکے۔

 

احتجاج کرتے ڈاکٹرز کا کہنا ہے کے ہم اب کسی لولی پاپ میں نہیں آئیگے۔ کراچی میں سول، جناح این آئی سی ایچ ، لیاری جنرل سمیت تمام اضلاع کے سرکاری اسپتال کے او پی ڈیز بند ہو جانے سے سینکڑوں مریض رُل گئے۔ حکومت کے اس رویئے سے بظاہر طور پر عوام پس رہی ہے، ضرورت اس بات کی ہے اس مسئلے کو جلد حل کیا جائے۔

عطاء سبحانی  2 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں