ٹک ٹاک پر پابندی کے لیے لاہور ہائیکورٹ میں درخواست دائر

 

لاہور (پبلک نیوز) سوشل میڈیا ایپلیکیشن ٹک ٹاک پر پابندی کے لیے لاہور ہائیکورٹ میں درخواست دائر کر دی گئی۔ درخواست میں وفاقی حکومت، پی ٹی اے اور پیمرا کو فریق بنایا گیا۔

 

تفصیلات کے مطابق ٹک ٹاک موبائل ایپلی کیشن پر پابندی کے لیے لاہور ہائی کورٹ میں درخواست آگئی۔ درخواست میں وفاقی حکومت، پی ٹی اے اور پیمرا کو فریق بنایا گیا۔

 

درخواست میں کہنا تھا کہ ٹک ٹاک کے باعث نوجوان نسل تباہ ہو رہی ہے اس لیے پابندی عائد کی جائے۔ ٹک ٹاک پر نوجوان اور کم عمر بچے شہرت کے لیے ویڈیوز اپ لوڈ کرتے ہیں۔ خطرناک ویڈیوز بنانے کے دوران ہلاکتیں بھی ہوئی ہیں۔ لوگ دوسروں کی چوری چھپے ویڈیوز بنا کربھی اپ لوڈ کردیتے ہیں۔ ایسی ویڈیوز اپ لوڈ ہونے سے خودکشیاں بھی ہو چکی ہیں۔

درخواست گزار کی جانب سے کہنا تھا کہ امریکہ میں کم عمر بچوں کے ایسی ایپلیکیشن کے استعمال پر پابندی ہے۔ ٹک ٹاک کی وجہ سے لوگوں میں نفسیاتی مسائل پیدا ہو رہے ہیں۔ عدالت ٹک ٹاک کے استعمال پر پابندی کا حکم دے۔ پیمرا کو ٹی وی چینلز پر ٹک ٹاک ویڈیوز دکھانے سے روکا جائے۔

احمد علی کیف  4 ماه پہلے

متعلقہ خبریں