آرمی ایوی ایشن کا تربیتی طیارہ راولپنڈی میں گر کر تباہ، 18 افراد شہید

 

راولپنڈی (پبلک نیوز) آرمی ایوی ایشن کا طیارہ راولپنڈی میں گر کر تباہ ہو گیا۔ افسوسناک حادثے میں طیارے کے دونوں پائلٹس، عملے کے 3 ارکان سمیت 18 افراد شہید ہو گئے۔ پاک فوج اور ریسکیو ٹیموں نے 2 گھنٹے کی کوشش کے بعد طیارے میں لگی آگ پر قابو  پایا۔ زخمیوں اور میتوں کو اسپتال منتقل کردیا۔

 

رات دو بج کر ایک منٹ پر آرمی ایوی ایشن کا طیارہ راولپنڈی میں موہڑہ کلو کے علاقے میں آبادی پر گر کر تباہ ہو گیا۔ نتیجے میں 2 پائلٹس اور عملے کے 3 ارکان سمیت 18 افراد جاں بحق اور 16 زخمی ہوئے۔ طیارے کے گرتے ہی زوردار دھماکہ ہوا اور آگ لگ گئی۔

 

آئی ایس پی آر کے مطابق  طیارہ معمول کی تربیتی پرواز پر تھا۔ شہید ہونے والوں میں پائلٹ لیفٹیننٹ کرنل ثاقب، لیفٹیننٹ کرنل وسیم، نائب صوبیدار افضل، حوالدار ابن امین اور حوالدار رحمت شامل ہیں۔

 

حادثے کی اطلاع ملتے ہی پاک فوج، انتظامیہ اور ریسکیو ٹیمیں موقع پر پہنچیں۔ زخمیوں اور میتوں کو اسپتال منتقل کیا گیا۔ کورکمانڈر لیفٹننٹ جنرل بلال اکبر نے جائے حادثہ کا دورہ کیا۔ طیارہ کریش ہونے سے متعلق بریفنگ دی گئی۔

 

ڈسٹرکٹ ایمرجنسی آفیسر کے مطابق کئی افراد گھروں کے ملبے تلے پھنس گئے جنہیں پاک فوج کے جوانوں نے نکال کر ریسکیو آپریشن مکمل کیا۔ میتوں کو شناخت کے لیے ہولی فیملی اسپتال سے سی ایم ایچ منتقل کیا گیا۔

 

وزیراعظم عمران خان نے راولپنڈی میں طیارہ حادثے میں قیمتی جانوں کے ضیاع پر افسوس کا اظہار کیا۔ غمزدہ خاندانوں کے ساتھ اظہار ہمدردی کی اور زخمیوں کی جلد صحت یابی کے لیے دعا کی۔ وفاقی کابینہ کے اجلاس میں بھی طیارہ حادثہ اور افغان بارڈر پر شہید ہونے والے جوانوں کے لیے فاتحہ خوانی کی گئی۔

احمد علی کیف  4 ماه پہلے

متعلقہ خبریں