رمضان شوگر ملز کیس: شہباز شریف کی حاضری سے استثنیٰ کی درخواست منظور

لاہور (شاکر محمود اعوان) احتسا ب عدالت میں رمضان شوگر مل اور آشیانہ اقبال ریفرنسز پر سماعت 11 مئی تک ملتوی، شہباز شریف لندن ہونے کی وجہ سے پیش نہ ہو سکے، استثنیٰ کی دوسری درخواست بھی منظور، حمزہ شہباز کی رمضان شوگرملز کیس میں پیشی، بیان رکارڈ کرا دیا۔


احتساب عدالت کےجج سید نجم الحسن کی رخصت پر ہونے پر جج وسیم اختر نے آشیانہ ریفرنس اور رمضان شوگر مل ریفرنس کی سماعت کی، شہباز شریف کے وکیل ان کے ملک سے باہر ہونے کے باعث حاظری سے استثی کی درخواست دی۔ عدالت نے استفسار کیا کہ رمضان شوگر مل میں دوسرا ملزم کون ہے جس پر وکیل نے حمزہ شہباز دوسری ملزم ہیں وہ عدالت میں موجود ہیں۔

 

عدالت نے حمزہ شہباز سے استفار کیا کہ آپ کچھ کہنا چاہیں گے۔ حمزہ شہباز نے کہا کہ میں عدالت کے سامنے حاضر ہوں،عدالت نے شہباز شریف کی حاظری معافی کی درخواست آج کے لیے منظور کرتے ہوئے رمضان شوگر مل اور آشیانہ ریفرنس پر سماعت گیارہ مئی تک ملتوی کر دی۔

 

عدالتی کارروائی کے بعد میڈیا سے گفتگو میں حمزہ شہباز نے واضح کیا کہ نواز، شہباز اور میں احتساب سے بھاگنے والے نیں ہم نے مشرف کے 10 سال میں نیب اور احتساب کا سامنا کیا ہے۔ پشاور میٹرو میں 7 ارب کا غبن ہے، پشاور میں نیب کہاں ہے کیا نیب وہاں سوئی ہوئی ہے۔ حمزہ شہباز نے وفاقی کابینہ تبدیلیوں کو تماشا اور سرکس قرار دے دیا اور کہا کہ پوری دنیا دیکھ رہی ہے وزرا ایک دوسرے پر الزام تراش کر رہے۔ اعظم سواتی نااہل ہوئے لیکن عمران نیازی نے اسے دوبارہ وزیر بنا دیا کیا نیا پاکستان ایسا ہوتا ہے؟

 

اپوزیشن لیڈر پنجاب اسمبلی حمزہ شہباز نے کہا کہ ملک کے بلدیاتی نظام کو یہ تبدیل کرنا چاہ رہے ہیں۔ اس قوم کو بے روزگاری اور مہنگائی نے ستایا ہوا ہے کوئی سرمایہ کار پاکستان میں سرمایہ کاری کو تیار نہیں، آج ملکی معاشی حالات خوفناک ہیں۔ حمزہ شہباز نے واصح کیا کہ ہمیں حکومت گرانے کو کوئی شوق نہیں نیازی خان کنٹینرز پر چڑھ کر عوام کو سبز باغ دکھاتا تھا، اب حکومت وہ وعدے پورے کرےمشکل وقت آتے ہیں لیکن حکومت میں اہلیت ہو تو ملک کو بچایا جا سکتا ہے۔

 

پاکستان کو اندرونی و بیرونی چیلنجز ہیں ملک کے مسائل بھوک پیاس، کھانے پینے کی اشیا کی مہنگائی ہے اشیائے خوردونوش غریب آدمی کی پہنچ سے باہر ہی گھر سے آتے ہوئے ملک کے لئے دعا کر رہا تھا۔ عوام کو اندھیرے میں نہیں رکھنا چاہتا آنے والے مہینوں مہنگائی کا نیا طوفان آرہا ہے ۔

عطاء سبحانی  3 ماه پہلے

متعلقہ خبریں