غربت کے خاتمہ کیلئے جہاد شروع کر دیا: وزیراعظم

اسلام آباد (پبلک نیوز) وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ 57 لاکھ خواتین  کے بینک اکاؤنٹ بنائیں گے۔ غریبوں کو تعلیمی گرانٹ دیں گے۔ پورے  ملک میں انصاف صحت کارڈ دے رہے ہیں۔ این جی اوز کے ساتھ اشتراک کریں گے۔ دنیا کے 5 ممالک میں پاکستان سب سے زیادہ خیرات دیتا ہے۔

 

غربت کے خاتمے کے لیے پروگرام "احساس اور کفالت" کے اجراء کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ مسلمانوں کے لیے مدینہ کی ریاست رول ماڈل ہے۔ جو انسان کامیاب ہوتا ہے دنیا اس سے سیکھتی ہے۔ آج یورپ میں ریاستوں کے اندر احساس ہے۔ یورپ میں جانوروں کے ساتھ بھی اچھا برتاؤ کیا جاتا ہے۔ ریاست مدینہ کا بنیادی اصول "رحم" تھا۔

 

وزیر اعظم کا کہنا تھا کہ آج ہم ریاست مدینہ کے اصولوں کے خلاف چلے گئے۔ ٹھیک سمت پر جانے کے لیے غربت کا خاتمہ پہلی کوشش ہے۔ دنیا کے سب سے کامیاب ترین انسان نبیؐ ہیں۔ شوکت خانم اسپتال بنانے کا فیصلہ والدہ کی بیماری کے پیش نظر کیا۔ کینسر کا علاج سب سے مہنگا علاج ہے۔ کامیابی اور ناکامی اللہ کے ہاتھ میں ہے، ہم صرف کوشش کر رہے ہیں۔ شوکت خانم کا غریب لوگوں پر علاج کا خسارہ 6 ارب روپے ہے۔

عمران خان کا کہنا تھا کہ چین نے 70 کروڑ لوگوں کو 30 سالوں میں غربت سے نکالا۔ قوم جب ارادہ کرلیتی ہے مدد اللہ دیتا ہے۔ پسماندہ اور کمزور لوگوں کے لیے80 ارب روپے کا اضافہ کر رہے ہیں۔ 2021 تک اسے 120 ارب تک لے کر جائیں گے۔ پاکستان میں 43 فیصد بچے خوراک کی کمی کا شکار ہیں۔ پاکستان میں ون ونڈو آپریشن  شروع کرنے جارہے ہیں۔ ملک بھر سے پسماندہ لوگوں کا ڈیٹا اکٹھا کریں گے۔

 

ان کا کہنا تھا کہ 57 لاکھ خواتین  کے بینک اکاؤنٹ بنائیں گے۔ غریبوں کو تعلیمی گرانٹ دیں گے۔ پورے  ملک میں انصاف صحت کارڈ دے رہے ہیں۔ این جی اوز کے ساتھ اشتراک کریں گے۔ دنیا کے 5 ممالک میں پاکستان سب سے زیادہ خیرات دیتا ہے۔ شیلٹر ہومز میں لوگ خود آ کر پیسہ فراہم کر رہے ہیں۔ شیلٹر ہومز میں حکومت کا کوئی خرچہ نہیں ہو رہا۔ بیت المال اگلے 10 سال کے لیے یتیم بچوں کے گھر بنائے گا۔

 

وزیر اعظم کا کہنا تھا کہ انصاف انشورنس کے لیے 33 ارب روپے مختص کیے گئے ہیں۔ ادائیگی موبائل کے ذریعے کی جائے گی۔ کلین اینڈ گرین پاکستان پر بھی کام کر رہے ہیں۔ دیہاتی خواتین کے لیے بکریاں دیں گے۔ دیہاتیوں کو دیسی مرغیاں دیں گے۔ مرغیاں اور بکریاں لوگوں کی آمدنی بڑھانے کا ذریعہ ہیں۔ سابقہ حکمرانوں نے ملک کا قرضہ 6 ہزار ارب سے 30 ہزار ارب تک پہنچا دیا۔ معذور لوگوں کی مدد کرنے کے لیے وہیل چیئرز دیں گے۔ بلا سود قرض دینے کے لیے 5 ارب روپے مختص کیے گئے ہیں۔

حارث افضل  3 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں