وفاقی کابینہ اجلاس، بھارت کے ساتھ تجارت معطل کرنے کی منظوری

 

اسلام آباد (پبلک نیوز) وفاقی کابینہ کے اجلاس میں بھارت کے ساتھ تجارت معطل کرنے کی منظوری دے دی گئی۔ کابینہ نے سمجھوتہ ایکسپریس اور تھر ایکسپریس بند کرنے کے فیصلے کی توثیق کردی۔ ایرا کے چیئرمین اور ڈپٹی چیئرمین کی تقرری کی سمری منظور کر لی گئی۔ پاکستان کرکٹ بورڈ کے آئین کی تشکیل نو کی بھی منظوری دے دی گئی۔

 

تفصیلات کے مطابق وزیراعظم عمران خان کے زیرصدارت ہونے والے وفاقی کابینہ کے اجلاس میں بھارت کے ساتھ تجارت معطل کرنے کی منظوری دے دی گئی۔ کابینہ کو بریفنگ دی گئی کہ پاکستان اور بھارت کی سالانہ دو طرفہ تجارت کا حجم 2 ارب 12 کروڑ 40 لاکھ ڈالر ہے۔ پاکستان بھارت سے ایک ارب 80 کروڑ ڈالر کی اشیا درآمد کرتا اور 32 کروڑ 40 لاکھ ڈالر کی اشیا برآمد کرتا ہے۔ کابینہ نے بھارت سے درآمدات اور برآمدات پر مکمل پابندی عائد کرنے کی منظوری دے دی۔

کابینہ ارکان نے شیخ رشید کےاقدامات کی بھی مکمل حمایت کر دی۔ وفاقی وزیر ریلوے شیخ رشید نے سمجھوتہ ایکسپریس اور تھر ایکسپریس بند کرنے کا معاملہ بھی کابینہ اجلاس میں رکھا۔ کابینہ نے سمجھوتہ ایکسپریس اور تھر ایکسپریس بند کرنے کے فیصلے کی توثیق کردی۔

 

کابینہ اجلاس میں 12 نکاتی ایجنڈے پر غور کیا گیا۔ فیڈرل انسٹی ٹیوٹ آف حیدرآباد کے لیے قانون سازی کی منظوری دی گئی۔ نیشنل فرٹیلائزر کے سی ای او کو عہدے سے ہٹا دیا گیا۔ ایرا کے چیئرمین اور ڈپٹی چیئرمین کی تقرری کی سمری منظور کر لی گئی۔ قومی پیداوار آرگنائزیشن کے بورڈ آف ڈائریکٹرز کی سمری بھی منظور کر لی گئی۔ وفاقی کابینہ نے پاکستان کرکٹ بورڈ کے آئین کی تشکیل نو کی بھی منظوری دے دی۔

احمد علی کیف  1 ماه پہلے

متعلقہ خبریں