اب کاروبار پرانے طریقے سے نہیں چلے گا: وزیراعظم

 

اسلام آباد(پبلک نیوز) وزیر اعظم سے ایف پی سی سی آئی، کے سی سی آئی اور دیگر صنعت کاروں سے ملاقات، تاجروں کا شناختی کارڈ کی شرط ختم کرنے کا مطالبہ، وزیراعظم کا خرید و فروخت کے لئے شناختی کارڈ کی شرط ختم کرنے سے انکار، اب کاروبار پرانے طریقے سے نہیں چلے گا۔

 

 

گورنر ہاؤس کراچی میں وزیر اعظم پاکستان عمران خان  سے فیڈریشن آف پاکستان چیمبرآف کامرس اینڈ انڈ سٹری(ایف پی سی سی آئی)، کراچی چیمبرز آف کامرس اینڈ انڈ سٹری (کے سی سی آئی) اور دیگر صنعت کاروں سے ملاقات ہوئی۔ وفاقی وزراء علی زیدی، حماد اظہر، فیصل واوڈا سمیت مشیر تجارت عبدالرزاق داؤد اور مشیر خزانہ عبدالحفیظ شیخ، ڈاکٹر عشرت حسین اور چیئرمین ایف بی آر شبر زیدی بھی وزیراعظم کے ہمراہ تھے۔

 

عمران خان کی جانب سے خرید و فروخت کے لئے شناختی کارڈ کی شرط ختم کرنے سے انکار کردیا گیا۔ جبکہ تاجروں کی جانب سے خرید و فروخت کے لئے شناختی کارڈ کی شرط ختم کرنے کا مطالبہ کیا گیا۔ لیکن وزیر اعظم کی جانب سےٓ کہا گیا کہ اب کاروبار پرانے طریقے سے نہیں چلے گا۔ یہ زیادتی ہے کہ 50 ہزار سے بڑی خریداری پر شناختی کارڈ نہ دیا جائے۔

 

وزیراعظم سے ہونے والی اس ملاقات میں وفود کی جانب سے ٹیکس نظام میں اصلاحات، مہنگائی پر کنٹرول، اسمگلنگ کی روک تھام، کاروبار میں آسانی، سرمایہ کاری میں فروغ، روزگار کے مواقع بڑھانے اور محصولات میں اضافہ کے حوالے سے بھی تجاویز پیش کی گئیں۔

 

تاجروں سے گفتگو کرتے ہوئے عمران خان کا کہنا تھا کہ میں صرف اسی وجہ سے آیا ہوں تا کہ آپ کے مسائل حل کرسکوں۔ میری پوری ٹیم یہاں موجود ہے تاکہ مسائل کا حل جلد از جلد نکالا جائے۔ غربت کا خاتمہ اور معاشی عمل کو تیز کرنا ہماری اولین ترجیح ہے۔ اس مقصد کو پورا کرنے کے لئے ہمیں آپ کی مدد چاہیے۔ اور کاروباری برادری پارٹنر بن کر حکومت کے ساتھ کام کرے۔

 

 تاجروں نے اس ملاقات کو مایوس کن قرار دے دیا اور میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ اس ملاقات کا کوئی فائدہ نہیں ہوا۔ وزیراعظم نے ہماری باتیں اطمنان سے سنیں لیکن کوئی حتمی فیصلہ نہ ہو سکا۔

احمد علی کیف  3 ماه پہلے

متعلقہ خبریں