ملک چلانے کیلئے پیسہ کم، تھوڑا صبر کرنا پڑے گا: وزیراعظم

جنوبی وزیرستان (پبلک نیوز) وزیراعظم عمران نے کا کہنا ہے کہ وزیرستان اور محسود قبائل کے مسائل اور تکلیفیں جانتا ہوں، قبائلی علاقوں میں تعلیم اور روزگار کے بہت سے مسائل ہیں۔ قبائلی علاقوں میں پانی کے مسائل حل کرنے کے اقدامات کریں گے۔

 

سپن کئی رغزئی میں قبائلی عمائدین سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ قبائلی علاقوں میں فوج بھیجنے کے خلاف تھا، وزیرستان اور محسود قبائل کے مسائل اور تکلیفیں جانتا ہوں، قبائلی علاقوں کی ساری تاریخ جانتا ہوں، یہاں آنے کا مقصد آپ کے مسائل حل کرنا ہے، ہر سال ایک ارب قبائلی علاقے کی ترقی پر خرچ ہو گا، پسماندہ علاقوں کو اُوپر اُٹھائے بغیر ملک ترقی نہیں کر سکتا، قبائل کے لیے وہ کام کروں گا جو کسی نے نہیں کیا۔

 

وزیراعظم نے کہا کہ مدینہ کی ریاست اصولوں کے اوپر بنائی گئی تھی، قبائلی علاقوں میں تعلیم اور روزگار کے بہت سے مسائل ہیں، مدینہ کی ریاست کی بنیاد اور عدل اور انصاف پر تھی، کمزور طبقے کو انصاف ملے تو ایسی ریاست کو کوئی شکست نہیں دے سکتا، سارے قبائلی علاقے میں صحت انصاف کارڈ تقسیم کیا جائے گا، صحت کارڈ سے 7لاکھ 20ہزار تک علاج کرایا جا سکے گا، 2 ڈگری کالجز اور اسپورٹس کمپلیکس تعمیر کرائے جائیں گے۔

وزیراعظم عمران خان کا خطاب کے دوران مزید کہنا تھا کہ دور دراز گاؤں میں سولر سسٹم نصب کیے جائیں گے۔ قبائلی علاقوں میں پانی کے مسائل حل کرنے کے اقدامات کریں گے، وزیرستان میں 100کلومیٹر سڑکیں بنائی جائیں گی۔ 20 ہزار ارب قرضوں کی قسطوں میں چلا جاتا ہے۔ قبائلی علاقوں میں بجلی کی فراہمی ممکن بنائیں گے۔ وزیراعظم عمران خان کا وزیرستان میں گرڈ اسٹیشن بنانے کا اعلان۔ ملک چلانے کے لیے پیسہ کم ہے۔ تھوڑا صبر کرنا پڑے گا، پیسہ آرہا ہے۔

عطاء سبحانی  3 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں