وزیراعظم نے بچوں کے ہوم ورک پر پابندی کی تجاویز مانگ لیں

اسلام آباد (پبلک نیوز) بچے سکولوں میں 8 گھنٹے گزارتے ہیں، توپھر ہوم ورک کیوں؟ وزیراعظم عمران خان نے بچوں کے ہوم ورک پر پابندی کی تجاویز مانگ لیں۔ وزیراعظم کے معاون خصوصی نعیم الحق نے ٹویٹر پر سوال کیا کہ اسکولوں میں زیرتعلیم بچوں کے لیے ہوم ورک پر پابندی ہونی چاہیے یا نہیں؟

تفصیلات کے مطابق بچے سکولوں میں 8 گھنٹے گزارتے ہیں، توپھر ہوم ورک کیوں؟ وزیراعظم عمران خان نے بچوں کے ہوم ورک پر پابندی کی تجاویز مانگ لیں۔

وزیراعظم کے معاون خصوصی نعیم الحق نے ٹویٹر پر سوال کیا کہ سکولوں میں زیرتعلیم بچوں کے لیے ہوم ورک پر پابندی ہونی چاہیے یا نہیں؟ انھوں نے کہا کہ بچے سکول میں پڑھائی کے لیے 6 سے 8 گھنٹے گزارتے ہیں۔

 

 

نعیم الحق کا کہنا تھا کہ اگر گھر آ کر بھی انھیں مزید ایک یا دو گھنٹے ہوم ورک کے لیے مختص کرنا پڑ جائیں تو ان کو دوسری صحت مند سرگرمیوں کیلئے بہت کم وقت ملتا ہے۔ یہ وقت بچوں کی نشرونما کیلئے ضروری ہوتا ہے۔

معاون خصوصی نے کہا بچوں کے لیے تعلیم وتربیت دونوں ضروری ہونی چاہئیں۔

احمد علی کیف  2 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں