کوئی یہ نہ سمجھے کہ احتجا ج کے باعث پیچھے ہٹ جاؤں گا، وزیراعظم عمران خان

 

اسلام آباد(پبلک نیوز) گوجرانوالہ چیمبر آف کامرس کی تقسیم انعامات کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ ہم اس ملک کو عظیم بنائیں گے۔ معاشرتی ترقی کے لیے مدینہ کی ریاست کا قیام ضروری ہے۔ کوئی یہ نہ سمجھے کہ احتجا ج کے باعث میں پیچھے ہٹ جاؤں گا۔ جیسے پاکستان کو چلایا جارہا تھا اب ایسے نہیں چلے گا۔

 

اسلام آباد میں گوجرانوالہ چیمبر آف کامرس کی تقسیم انعامات کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ ہم اس ملک کو عظیم بنائیں گے۔ میں نے الیکشن کے بعد مدینہ کی فلاحی ریاست کی بات کی۔ لوگ ووٹ لینے کے لیے اسلام کا نام بیچتے ہیں۔ معاشرتی ترقی کے لیے مدینہ کی ریاست کا قیام ضروری ہے۔ مدینہ کی ریاست کے ماڈل کو سمجھنا ضروری ہے۔

عمران خان کا کہنا تھا کہ وہ قومیں تباہ ہوجاتی ہیں جہاں امیراورغریب کے لیےالگ الگ قانون ہو۔ عدل وا نصاف مدینہ کی ریاست کے پہلے ستون تھے۔ ریاست مدینہ میں سب قانون کی نظر میں برابرتھے۔ جیسے پاکستان کو چلایا جارہا تھا اب ایسے نہیں چلے گا۔ میری پاکستان سے باہر کوئی بھی جائیداد نہیں ہے۔

 

وزیر اعظم کا کہنا تھا کہ کوئی یہ نہ سمجھے کہ احتجا ج کے باعث میں پیچھے ہٹ جاؤں گا۔ اگر آج میں پیچھے ہٹ گیا تو قوم سے غداری کروں گا۔ جن کے اربوں روپے باہر ہیں ان کے مفادات اور ہیں۔ قرضوں کے سود پر پیسہ چلا جائے تو ملک نہیں چل سکتا۔ 22 کروڑ لوگوں میں سے صرف 15 لاکھ لوگ ٹیکس دیتے ہیں۔

 

ان کا مزید کہنا تھا کہ سب کو ٹیکس نیٹ میں لانے کی کوشش کررہے ہیں۔ ہم سرمایہ کاروں کے لیے آسانیاں پیدا کررہے ہیں۔ اسمگلنگ کو روکنے کے لیے کریک ڈاؤن کررہے ہیں۔ اسمگلنگ نے پاکستان کی صنعت کو بہت نقصان پہنچایا۔

احمد علی کیف  1 ماه پہلے

متعلقہ خبریں