حج کی سہولت مفت دیتے اگر اتنے قرضے نہ چڑھے ہوتے: عمران  خان

اسلام آباد (پبلک نیوز) وزیر اعظم عمران خان نے کہا ہے کہ اتنے قرضے نہ چڑھے ہوتے، تو حج کی سہولت مفت دیتے۔ ملک میں تمام سہولتیں ایلیٹ کلاس کو دی جاتی تھیں، ہماری سوچ ہے، عادم آدمی کو غربت سے کیسے نکالا جائے۔

 

پاکستان ریلوے لائیو ٹریکنگ سسٹم، تھل ایکسپریس کے افتتاح کے موقع پر کیا وزیر اعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ اتنے قرضے نہ چڑھے ہوتے، تو حج کی سہولت مفت دیتے۔

 

وزیر اعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ نئے پاکستان میں عام آدمی کی زندگی آسان ہونی چاہیے، ملک میں تمام سہولتیں ایلیٹ کلاس کو دی جاتی تھیں، ہماری سوچ ہے، عادم آدمی کو غربت سے کیسے نکالا جائے۔

 

 

عمران خان کا کہنا تھا کہ دنیا بھر میں عام آدمی کے لیے ٹرین کا سفر سستا ہے۔ ایم ایل ون سسٹم کے ذریعے کراچی سے پشاور 8 گھنٹے میں پہنچ سکتے ہیں، پاکستان میں یہ سسٹم لانے کی کوشش کر رہے ہیں، چین دنیا میں ریلوے سسٹم میں سب سے آگے ہے۔ سی پیک کے تحت چین سے ہر شعبے میں تعاون چاہتے ہیں۔

 

ان کا کہنا تھا کہ پچھلے10 سال میں لوگوں کے دلوں سے خوف اٹھ گیا تھا، این آر او ون اور این آر او ٹو کے بعد سب نے دیکھا کوئی کہنے والا نہیں، اب ایسا نہیں ہوگا۔

 

انھوں‌ نے کہا کہ ہم نے وزیراعظم ہاؤس کے 30 فیصد اخراجات کم کر دیئے ہیں۔ وزیراعظم ہاؤس میں آڈیٹر بٹھایا، جو مزید خرچے کم کرنے پر توجہ دے رہا ہے۔ میں 30 فیصد خرچے کم کرسکتا ہوں، تو دیگر وزرا 10 فیصد کم کرسکتے ہیں۔

حارث افضل  7 ماه پہلے

متعلقہ خبریں