حکومت کہیں نہیں جارہی بلکہ آصف زرداری جیل جارہے ہیں: وزیراعظم

جمرود (پبلک نیوز) وزیراعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ پاکستان مشکل دور سے گزر رہا ہے۔ سالانہ 2 ہزار ارب قرضوں کی اقساط میں چلا جاتا ہے۔ پیپلز پارٹی کے دور حکومت میں پاکستان پر قرضہ 6 ہزار ارب روپے تھا۔ ن لیگ کے دور میں قرضہ 30 ہزار ارب روپے تک پہنچ گیا۔ مخالفین نے 200 اور 500 دے کر لوگوں کو جلسوں میں بلایا۔

 

جمرود میں جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ ن لیگ کو تجربہ صرف چوری اور منی لانڈرنگ میں ہے۔ 5 سال بعد ہماری حکومت کا موازنہ سابق حکومتوں سے کیا جائے۔ پاکستان مشکل دور سے گزر رہا ہے۔ سالانہ 2 ہزار ارب قرضوں کی اقساط میں چلا جاتا ہے۔ پیپلز پارٹی کے دور حکومت میں پاکستان پر قرضہ 6 ہزار ارب روپے تھا۔ ن لیگ کے دور میں قرضہ 30 ہزار ارب روپے تک پہنچ گیا۔ مخالفین نے 200 اور 500 دے کر لوگوں کو جلسوں میں بلایا۔

عمران خان کا کہنا تھا کہ دھرنا تب کامیاب ہوتا ہے جب آپ عوام کے لیے کھڑے ہوتے ہیں۔ آصف زرداری اور بلاول کو اسلام آباد دھرنے کی دعوت دیتا ہوں۔ باپ بیٹا اسلام آباد آئیں کنٹینر اور کھانا بھی دوں گا۔ چیلنج کرتا ہوں باپ بیٹا ایک ہفتہ کنٹینر پر رہ کر دکھائیں۔ آصف زرداری جتنا مرضی زور لگالیں حکومت کہیں نہیں جائے گی۔ حکومت تو نہیں جائے گی آپ جیل چلے جائیں گے۔

 

وزیر اعظم کا کہنا تھا کہ مولانا فضل الرحمان ہر دوسرے دن ملین مارچ کی بات کرتے ہیں۔ مولانافضل الرحمان الیکشن میں کلین بولڈ ہونے کے بعد رو رہے ہیں۔ مولانا فضل الرحمان ٹیم کے 12 ویں کھلاڑی ہیں۔ بے قصور ہیں تو برطانیہ بھاگنے کے بجائے عدالتوں کو جواب دیں۔ عوام کی دولت لوٹنے والوں کو جواب دینا پڑے گا۔

 

ان کا کہنا تھا کہ قبائلی علاقے کی عوام نے بہت مشکل وقت دیکھا۔ قبائلی علاقے کا جو نقصان ہوا اسے پورا کرنے کی کوشش کریں گے۔ قبائلی علاقوں کے نوجوانوں کا مستقبل روشن ہے۔ 10 سال میں سالانہ 100 ارب روپے قبائلی علاقوں پر خرچ کریں گے۔ جبہ اور باڑہ ڈیم منصوبہ پورے کریں گے۔ قبائلی نوجوانوں کو روزگار فراہم کریں گے۔ نوجوانوں کے لیے سستے قرضے لے کر آئیں گے۔ طورخم بارڈر 24 گھنٹے کھلا رکھنے کی ہدایت کر دی۔ پاکستان کو عظیم قوم بننے سے کوئی طاقت نہیں روک سکتی۔

حارث افضل  2 ماه پہلے

متعلقہ خبریں