پیپلز پارٹی، ن لیگ نے مولانا فضل الرحمان کو اپنا لیڈر مان لیا ہے: وزیراعظم

اسلام آباد(ٹکا خان ثانی) وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ ن لیگ اور پیپلزپارٹی کی اب یہ حالت ہوئی گئی کہ مولانا فضل الرحمان کو اپنا لیڈر مان لیا۔ آزادی مارچ کے دوران کسی کو قانون ہاتھ میں نہیں لینے دیں گے۔ مدارس کے بچوں کو سڑکوں پر لانا ان کے مستقبل سے کھیلنے کے مترادف ہو گا۔

 

وزیراعظم کی زیرصدارت حکومتی ترجمانوں کا اجلاس ہوا، جے یو آئی ف کے مارچ کا بھی تذکرہ ہوا۔ ارکان نے وزیراعظم سے سوال کیا کہ کیا جے یو آئی ف سے مذاکرات کے لیے کوئی کمیٹی بنائی گئی ہے؟ وزیراعظم بولے مذاکرات کا آپشن ہے۔ بات چیت کے دروازے کھلے ہیں۔ پیپلز پارٹی اور ن لیگ کی یہ حالت ہو گئی ہے کہ اب دونوں نے مولانا فضل الرحمان کو اپنا لیڈر مان لیا ہے۔ آزادی مارچ کے دوران کسی کو قانون ہاتھ میں نہیں لینے دیں گے، کسی نے قانون توڑا تو حکومت حرکت میں آئے گی۔

 

وزیراعظم عمران خان نے اجلاس کے دوران کہا کہ مدارس کے بچوں کو سڑکوں پر لانا ان کے مستقبل سے کھیلنے کے مترادف ہو گا۔ وزیراعظم نے شرکا کو دورہ چین سے بھی آگاہ کیا۔ بتایا کہ دورہ چین انتہائی کامیاب رہا۔ چین کشمیر کے مسئلے پر ہمارے ساتھ ہے۔ چینی صدر کی دورہ بھارت سے قبل پاکستانی قیادت سے ملاقات ایک واضح پیغام ہے۔ چین کے تمام سول، سیکیورٹی اور سیاسی اداروں نے پاکستان پر اعتماد کا اظہار کیا۔


وزیراعظم نے کہا کہ ایران اورسعودی عرب کا دورہ بھی کر رہا ہوں، دونوں ممالک کے درمیان ثالثی کا کردار ادا کر رہے ہیں۔ وزیراعظم نے ترجمانوں کو معاشی کامیابیاں عوام تک پہنچانے کی ہدایت کی اور کہا دس ارب ڈالر کا قرض واپس کر کے بھی معاشی طور پر مستحکم ہوئے۔۔پاکستان کی ایکسپورٹس بڑھ رہی ہیں، معاشی ریفارمز کے ثمرات ملنا شروع ہو گئے۔

عطاء سبحانی  4 روز پہلے

متعلقہ خبریں