فرشتہ سے مبینہ زیادتی اور قتل کا وزیراعظم نے نوٹس لے لیا،پاک فوج کی مذمت

اسلام آباد(پبلک نیوز) وزیراعظم کا فرشتہ کے قتل کے معاملے پر ایکشن، ڈی ایس پی عابد کو معطل کر دیا، آئی جی اسلام آباد سے وضاحت طلب کر لی ہے، ڈی جی آئی ایس پی آر کی فرشتہ کے قتل کی مذمت، کہا تحقیقات میں پاک فوج ہر قسم کے تعاون کے لیے تیار ہے، جبکہ گلا لئی اسماعیل پر فرشتہ قتل پر ریاست کے خلاف بیانات پر مقدمہ درج کر لیا گیا ہے۔

 

وزیراعظم پاکستان عمران خان نے معصوم پری فرشتہ کے قتل کا نوٹس لیتے ہوئے ڈی ایس پی عابد کو معطل کر دیا ہے اور ایس پی عمر خان کو او ایس ڈی بنا دیا ہے، جبکہ وزیراعظم کی جانب سے آئی جی اسلام آباد عامر ذوالفقار اور ڈی آئی جی آپریشنز وقار الدین سید سے بھی وضاحت طلب کر لی گئی ہے۔

 

ڈی جی آئی ایس پی آر نے فرشتہ کے قتل کی مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ شر پسند عناصر سے نئی نسل کے تحفظ کے لیے ہمیں متحد ہونا ہو گا واقعے کے ذمہ داروں کو قانون کے کٹہرے میں لایا جائے، ڈی جی آئی ایس پی آر نے مزید کہا فرشتہ قتل کیس کی تحقیقات میں پاک فوج ہر قسم کے تعاون کے لیے تیار ہے۔

 

دوسری جانب معصوم بچی فرشتہ کے بہیمانہ قتل پر ریاست اور اداروں کے خلاف بیانات دینے پر گلالئی اسماعیل کے خلاف انسداد دہشت گردی ایکٹ کی دفعہ چھ اور سات کے تحت شہزاد ٹاؤن تھانہ اسلام آباد میں مقدمہ درج کیا گیا ہے، مقدمے میں کہا گیا ہے گلالئی اسماعیل نے پشتونوں کو اداروں کے خلاف ابھارنے کی کوشش کی ہے۔

عطاء سبحانی  1 ماه پہلے

متعلقہ خبریں