عمران خان ساری اپوزیشن کو ہی جیل میں ڈال دیں: مریم اورنگزیب

اسلام آباد (پبلک نیوز) رہنماء مسلم لیگ ن مریم اورنگزیب نے کہا ہے کہ عمران خان کو کہنا چاہتی ہوں کہ پوری اپوزیشن کو جیل میں ڈالیں۔ آج لاہور ہائی کورٹ میں نیب کی جانب سے موقف اپنایا گیا کہ حمزہ شہباز نے منی لانڈرنگ کی۔ نیب نے حمزہ شہباز کے خلاف منی لانڈرنگ سے متعلق کوئی ثبوت پیش نہ کیے۔

 

صحافی نے مریم اوربگزیب سے سوال کیا کہ کل اسلام آباد ہائیکورٹ اور آج لاہور ہائیکورٹ نے اپوزیشن رہنماؤں کی  ضمانت مسترد کردیں کیا کہنا چاہیں گی جس پر انہوں نے جواب دیا کہ میں عمران خان کو کہنا چاہتی ہوں کہ پوری اپوزیشن کو جیل میں ڈالیں۔ آج لاہور ہائی کورٹ میں نیب کی جانب سے موقف اپنایا گیا کہ حمزہ شہباز نے منی لانڈرنگ کی۔ نیب نے حمزہ شہباز کے خلاف منی لانڈرنگ سے متعلق کوئی ثبوت پیش نہ کیے۔

 

جب یہی عالم نہ ہو الزامات کیا ہیں تو اس کا دفاع کون کرسکتا ہے۔ موجودہ حالات کے تناظر میں ہم نے اپنی درخواست ضمانت واپس لی۔ یہ سب کچھ عمران خان کے حکم پر ہو رہا ہے۔ موجودہ سیاسی انتقام کی مثال پاکستان کی تاریخ میں نہیں ملتی۔ یہ نااہل اور نالائق حکومت ہے۔ عمران خان ایک مقصود ایجنڈے پر کام کر رہے ہیں۔ نیب گرفتار پہلے اور انتظامات کا بعد میں بتاتی ہے۔

 

عمران خان نے 10 ماہ میں ملکی معیشت کا بیڑہ غرق کردیا۔ دس ماہ میں ترقی کی شرح آبادی اور مہنگائی کی شرح تین گنا ہوگئی۔ عوام دشمن بجٹ کسی صورت پاس نہیں ہونے دیں گے۔ کسی بھی صورت آئی ایم ایف کا بنایا ہوا بجٹ پاس نہیں ہونے دیں گے۔ جو بجٹ آئی ایم ایف کے خزانے بھرے اس کو مسترد کرتے ہیں۔ حمزہ شہباز کے خلاف کوئی بھی ریفرنس یا ثبوت سامنے نہیں آیا۔ جب کوئی ثبوت نہیں ملتا تو آمدن سے زائد اطاعت بنانے کا گھسا پٹا الزام عائد کر دیا جاتا ہے۔

 

عمران خان آخر آپ کب تک اپوزیشن پر جھوٹے اور بزدلانہ وار کرتے رہیں گے۔ یہی اپوزیشن ملک بدر جیلوں اور تختہ دار پر بھی چڑھی۔ عوام کے حقوق پر ڈاکہ ڈالا جارہا ہے۔ ملکی معیشت کو ایک منظم سازش کے ذریعے کمزور کیا جا رہا ہے۔ ہم اس سازش کو کسی صورت کامیاب نہیں ہونے دیں گے۔

 

ایک صحافی نے سوال کیا کہ کیا ن لیگ عوامی رابطہ مہم شروع کرنے جا رہی ہیں؟ جس پر انہوں نے جواب دیا کہ اپوزیشن کی تمام پارلیمانی پارٹی کا اجلاس آج شام طلب کیا گیا ہے۔ دو بجے مسلم لیگ نون کی پارلیمانی پارٹی کا اجلاس ہونا ہے۔ آئی ایم ایف کی پاکستان دشمنی ٹیم بجٹ بنا رہی ہے۔ گزشتہ پانچ دنوں سے کابینہ کی پوری ٹیم نتھیا گلی میں سیر سپاٹے کر رہی ہے۔ آئی ایم ایف کو ملکی خزانے کی چابی دے دی گئی ہے۔

حارث افضل  1 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں