نواز شریف نے بیرون ملک روانگی کی مشروط حکومتی اجازت مسترد کر دی

لاہور(پبلک نیوز) مدت کی شرط قبول ہے اور نہ ہی بانڈ دیں گے، مسلم لیگ ن نے بیرون ملک روانگی کی مشروط حکومتی اجازت مسترد کر دی۔ احسن اقبال کا کہنا ہے کہ نواز شریف کی صحت مخدوش ہے اور حکومت انہیں بیرون ملک جانے سے روک رہی ہے۔

 

کوئی بانڈ جمع کروائیں گے اور نہ ہی مشروط اجازت قبول  ہے،  نواز شریف اور ن لیگ  نے حکومتی فیصلہ مسترد کر دیا، فیصلے کے خلاف صلاح مشورے، عدالت سے رجوع کرنے کا امکان،  سیکریٹری جنرل ن لیگ احسن اقبال کا کہنا تھا کہ نواز شریف کی صحت مخدوش ہے مگر ان کو بیرون ملک علاج کروانے سے روکا جا رہا ہے۔ حکومت نواز شریف کی صحت کے ساتھ سیاست کر رہی ہے، اس سے قبل بیگم کلثوم نواز کے حوالے سے بھی پی ٹی آئی کی جانب سے سیاست کی گئی تھی۔

ترجمان ن لیگ  مریم اورنگزیب نے بیان میں کہا کہ نواز شریف کا نام ای سی ایل سے نکالنے کو مشروط کرنے کا حکومتی فیصلہ عمران صاحب کے متعصبانہ رویئے اور سیاسی انتقام پر مبنی ہے، حکومت نواز شریف کی صحت کی سنگینی بارے اعتراف کے ساتھ ہی ریاکاری اور بد نیتی سے ان کے بیرونِ ملک فوری علاج میں رکاوٹیں کھڑی کر رہی ہے۔ لائحہ عمل طے کرنے کے لیے صدر ن لیگ شہباز شریف نے پارٹی کی سینئر قیادت کا اہم اجلاس کل طلب کر لیا، جس میں حکمت عملی پر سینئر قیادت کو اعتماد میں لیا جائے گا،  اجلاس کے بعد شہباز شریف کل سہہ پہر تین بجے اہم پریس کانفرنس میں لائحہ عمل  کا اعلان کریں گے۔

عطاء سبحانی  3 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں