ایک وزیر کے خط پر ایف آئی اے نے امیر مقام کے بیٹے کو گرفتار کیا: سینیٹر صابر شاہ

پشاور (پبلک نیوز) پاکستان مسلم لیگ ن کے سنیٹر پیر صابر شاہ نے کہا ہے کہ ایک وزیر کے خط پر ایف آئی اے نے امیر مقام کے بیٹے کو گرفتار کیا۔ حکومت سے کوئی این ار او نہیں لے رہے ہیں عدالتوں میں مقدمات لڑ رہے ہیں، موجودہ حکومت انتقامی کارروائیوں پر اتر آئی ہے، ادارے آنکھیں بند کر کے وزیراعظم کی باتوں پر عمل کررہے ہیں۔

پریس کانفرنس کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ سیاسی جماعتیں اقتدار میں آکر عوام کی خدمت کرتی ہیں۔ بدقسمتی موجودہ حکومت انتقامی کارروائیوں پر اتر آئی ہے۔ نواز شریف سے انتقام شروع ہوا اور اب امیر مقام کے بیٹے کو بھی نشانہ بنایا جا رہا ہے۔ ایک وزیر کے خط پر ایف آئی اے نے امیر مقام کے بیٹے کو گرفتار کیا۔

پیر صابرشاہ نے کہا کہ موجودہ حکومت کو سمجھنا چاہیئے کہ حالات بدلتے رہتے ہیں۔ اداروں کے ذریعہ انتقام کا ایک طریقہ وضع کیا جا چکا ہے۔ ادارے بھی آنکھ بند کر کے وزیراعظم کی باتوں پر عمل کررہے ہیں۔ وزارت خزانہ اور اسٹیٹ بینک میں باہر سے آئی ایم ایف کے بندے بٹھا دیے گئے۔

لیگی رہنما کا کہنا تھا کہ آئی ایم ایف معاہدے سے مہنگائی کا بڑا سیلاب آنے والا ہے۔ صدارتی نظام یا ٹیکنوکریٹ کی سوچ ملک کے خلاف سازش ہے۔ صوبوں کی خودمختاری اور اٹھارویں ترمیم کو ختم کیا جارہا ہے۔ حکومت سے کوئی این ار او نہیں لے رہے ہیں عدالتوں میں مقدمات لڑ رہے ہیں۔

احمد علی کیف  4 ماه پہلے

متعلقہ خبریں