اورنج لائن منصوبہ، شالامارباغ خطرات سے دوچار فہرست میں شامل ہونے کا خدشہ

لاہور(ادریس شیخ) اورنج لائن میٹروٹرین منصوبے کے نقصانات، شالامارباغ خطرات سے دوچار فہرست میں شامل ہونے کا خدشہ، اورنج لائن میٹروٹرین منصوبے نے شالامارباغ کی جمالیاتی اہمیت کو تباہ کر دیا، مغلیہ فن تعمیر کا شاہکار شالامارباغ اورنج لائن ٹرین کی وجہ سے امن و سلامتی کی راحتوں سے دور ہٹ جائے گا۔

 

اقوام متحدہ کے ذیلی ادارے یونیسکو کی ورلڈ ہیری ٹیج کمیٹی نے اورنج لائن میٹروٹرین منصوبے کے تاریخی اہمیت کی حامل عمارات پر اثرات سے متعلق رپورٹ حکومت پاکستان کو بھجوا دی، ورلڈ ہیری ٹیج کمیٹی کی رپورٹ کے مطابق اورنج لائن میٹروٹرین منصوبے کی وجہ سے شالامار باغ کو ناقابل تلافی نقصان پہنچا ہے

 

یونیسکو کے مطابق اورنج لائن میٹروٹرین چلنے سے شالامارباغ کو مزید نقصان پہنچے گا۔ پنجاب حکومت نے اورنج لائن میٹروٹرین منصوبے کے دوران تاریخی اہمیت کی حامل عمارات کی عالمی اہمیت کا خیال نہیں رکھا، شالامارباغ اورنج لائن میٹرو ٹرین منصوبے کی وجہ سے اپنی تعمیر کے اصل معنی کھودے گا۔

 

یونیسکو کا کہنا ہے کہ اگر پنجاب حکومت 2018میں اقوام متحدہ کی سفارشات پر اورنج لائن میٹرو ٹرین کا روٹ بدل دیتی تو نقصان سے بچا جا سکتا تھا، ورلڈ ہیری ٹیج کمیٹی نے پنجاب حکومت سے یکم فروری کو اورنج لائن میٹرو ٹرین کے اثرات سے متعلق رپورٹ طلب کر لی ہے۔ بپلک ٹرانسپورٹ کی سہولت کے نام پر تاریخی اہمیت کی حامل عمارات کی شناخت مجروح نہیں ہونی چاہیئے۔

عطاء سبحانی  3 ماه پہلے

متعلقہ خبریں