زائد اثاثہ جات کیس، پی پی رہنما خورشید شاہ کو گرفتار کر لیا گیا

 

اسلام آباد (پبلک نیوز) پاکستان پیپلز پارٹی کے رہنما سید خورشید شاہ کو قومی احتساب بیورو( نیب) کی جانب سے گرفتار کر لیا گیا ہے۔ ریمانڈ کے لیے کل سکھر کی احتساب عدالت میں پیش کیا جائے گا۔

 

تفصیلات کے مطابق پی پی رہنما سید خورشید شاہ کو آمدن سے زائد اثاثہ جات کیس میں گرفتار کیا گیا۔ نیب راولپنڈی اور سکھر نے مشترکہ کاروائی کر کے گرفتار کیا۔ خورشید شاہ کو ریمانڈ کے لیے کل سکھر کی احتساب عدالت میں پیش کیا جائے گا۔

 

نیب ذرائع کے مطابق پولی کلینک کو نیب کی جانب سے خورشید شاہ کی طبی معانئے کی درخواست کر دی گئی۔ پولی کلینک سے ڈاکٹر غلام مجتبیٰ میڈیکل آفیسر کچھ دیر میں خورشید شاہ کے طبی معائنے کے لیے روانہ ہوں گے۔ نیب آفس میں خورشید شاہ کا بی پی، شوگر چیک کرنے کے ساتھ  ساتھ ای سی جی بھی کی جائے گی۔

رہنما پیپلز پارٹی شیری رحمان کا کہنا تھا کہ یہ انتقامی احتساب ہے۔ خورشید شاہ کا جعلی اکاؤنٹس کیس سے کوئی تعلق نہیں۔ خورشید شاہ کو بغیر ٹھوس شواہد کے گرفتار کیا گیا۔ آج کے اجلاس میں پیپلز پارٹی لائحہ عمل طے کرے گی۔

 

واضح رہے کہ خورشید شاہ کیس پر 7 اگست کو تحقیقات کا آغاز کیا گیا تھا۔ آج نیب آفس میں طلبی کے باوجود خورشید شاہ پیش نہ ہوئے اور چیئرمین نیب کی جانب سے کرفتاری وارنٹ جاری کیے گئے۔

احمد علی کیف  4 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں