بلاول بھٹو نے قومی اسمبلی اور سینیٹ میں احتجاج کرنے کا عندیہ دے دیا

اسلام آباد(پبلک نیوز) آصف علی زرداری کی گرفتاری کے بعد پیپلز پارٹی نے سی ای سی کا اجلاس بلایا، جس میں فیصلہ کیا گیا ہے کہ پیپلز پارٹی کے خلاف حکومت کی انتقامی کارروائیوں کے خلاف مظاہرے کیے جائیں گے اور عوام دشمن بجٹ اور مہنگائی کے خلاف بھی احتجاج کیا جائے گا اور بلاول بھٹو نے قومی اسمبلی اور سینٹ میں احتجاج کرنے کا عندیہ دے دیا ہے۔

 

اسلام آباد میں بلاول بھٹو زرداری کی زیر صدارت پیپلز پارٹی کی سینٹرل ایگزیکٹو کمیٹی کا اجلاس ہوا جس میں حکومت مخالف تحریک کے حوالے سے اہم فیصلے کیے گئے، ذرائع کے مطابق پیپلز پارٹی کی سی ای سی نے آصف زرداری کی گرفتاری کی مذمت کی اور ملک بھر میں احتجاجی مظاہروں کی کال دے دی۔ پیپلزپارٹی سندھ میں آصف زرداری کی گرفتاری کیخلاف آج یوم سیاہ منائے گی۔

بلاول بھٹو زرداری کا پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہنا تھا کہ حکومت نے اگر اپنی انتقامی کارروائیاں نہ روکیں تو قومی اسمبلی اور سینٹ میں بھرپور احتجاج کیا جائے گا، اُن کا مزید کہنا تھا! بجٹ اجلاس میں بھی بھر پور احتجاج کیا جائے گا، ذرائع کے مطابق اجلاس میں اپوزیشن جماعتوں کی اے پی سی میں شرکت اور متحدہ اپوزیشن کے ساتھ مل کر چلنے کی منظوری بھی دی گئی، یہ فیصلہ بھی کیا گیا کہ چیئرمین پیپلز پارٹی بلاول بھٹو ملک گیر عوامی رابطہ مہم بھی چلائیں گے

عطاء سبحانی  1 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں