بڑے بڑے برج جو آج جیل کے اندرہیں، یہ تبدیلی ہے: وزیر اعظم عمران خان

اسلام آباد (پبلک نیوز) وزیراعظم پاکستان عمران خان نے کہا ہے کہ بڑے بڑے برج جو آج جیل کےاندرہیں، یہ تبدیلی ہے۔  جب سےاقتدار ملا ہے، پہلے دن سے مخالفین کہتے ہیں کہاں ہے نیا پاکستان۔

 

قوم سے خطاب کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ پاکستان میں کوئی سوچ بھی نہیں سکتاتھا اتنےبڑےبرج جیل میں ہوں گے۔ یہ ہےقانون کی بالادستی جوآہستہ آہستہ نظرآرہی ہے۔ نیب میرے نیچے نہیں،آج کی عدلیہ آزاد ہے۔ اپوزیشن پرکیسزمیں نے نہیں بنائے۔

 

انھوں نے کہا کہ پہلے دن سے اپوزیشن نے مجھے پارلیمنٹ میں تقریر کرنے نہیں دی۔ نیب کا چیئرمین ہمارا لگایا ہوا نہیں،ن لیگ اورپیپلزپارٹی نے لگایا۔ ماضی میں سپریم کورٹ کے ججز کوخریدا گیا۔ پاکستان میں کوئی سوچ بھی نہیں سکتاتھاکہ اتنےبڑےبرج جیل میں ہوں گے۔ یہ کوئی سوئچ نہیں کہ عمران خان دبائےگااورنیاپاکستان بن جائےگا۔

 

وزیر اعظم کا کہنا تھا کہ زرداری کی ایک سوارب روپے کی منی لانڈرنگ سامنے آئی۔ دونوں جماعتوں نے طے کیا تھا ایک دوسرے کومدت پوری کرنے دیں گے۔ دونوں جماعتوں نے کرپشن کرکے پیسا ہنڈی کےذریعے باہربھجوایا۔ ن لیگ نے10 سال میں 4کمپنیوں سے 30 کمپنیاں بنائیں۔ 2008 کے بعد ملک پرجوقرضہ چڑھا اسکی وجہ دونوں جماعتوں کی کرپشن ہے۔

 

عمران خان نے مزید کہا کہ پیپلزپارٹی اورن لیگ نے کھل کرکرپشن کی۔ ن لیگ اورپیپلزپارٹی نے میثاق کرپشن پردستخط کیے۔ 2این آراوز کی قیمت ملک نے ادا کی۔

احمد علی کیف  1 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں