وزیراعظم کی نریندر مودی کو اختلافات مذاکرات سے حل کرنے کی پھرسے دعوت

اسلام آباد(پبلک نیوز) پاکستان اور بھارت میں صرف ایک ہی اختلاف ہے، کشمیر، خطے میں امن کیلئے کشمیر پر مذاکرات ناگزیر ہے، وزیراعظم عمران خان کی نریندرمودی کو ایک بارپھراختلافات مذاکرات سے حل کرنے کی دعوت، وزیراعظم کا غیرملکی ادار کو انٹرویو ۔

 

وزیراعظم عمران خان نے برطانوی نشریاتی ادارے بی بی سی کو دیئے گئے انٹرویو میں بھارتی ہم منصب نریندر مودی کو پیغام دیا کہ مسئلہ کشمیر اُبلتا ہوا نہیں رہ سکتا، اس کو حل کرنا ہی ہو گا۔ وزیراعظم نے کہا کہ کشمیر میں جو کچھ بھی ہو رہا ہے وہ وہاں کے لوگوں کا ردِ عمل ہے، لیکن وہ ہم پر الزام عائد کریں گے تو کشیدگی بڑھے گی، جس طرح ماضی میں بڑھتی تھی، اگر ہم کمشیر کا مسئلہ حل کر سکتے ہیں تو برصغیر میں زبردست امن ہو گا۔ بی جے پی جیتی تومسئلہ کشمیرپرمذاکرات کا امکان ہے۔

 

وزیراعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ پاکستان اور بھارت کی حکومتوں کی اولین ترجیح غربت میں کمی لانا ہونی چاہیے۔ پاکستان اور بھارت کے درمیان صرف ایک اختلاف ہے جو کشمیر ہے۔ دہشت گردی سے متعلق سوال پر وزیراعظم نے کہا کہ جنگجو گروہوں کے خلاف کارروائی کا عزم رکھتے ہیں، کیونکہ یہ پاکستان کے مستقبل کے لیے ہے، اس حوالے سے بیرونی دباؤ نہیں کیونکہ یہ ہمارے مفادات میں ہے کہ پاکستان میں کوئی عسکریت پسند گروہ نہ ہو۔

عطاء سبحانی  2 ماه پہلے

متعلقہ خبریں