مودی کی مقبوضہ کشمیر آمد پر مکمل ہڑتال، حریت قیادت کو نظر بند کر دیا

سرنگر(پبلک نیوز) بھارتی وزیراعظم نریندر مودی کی مقبوضہ کشمیر آمد پر مکمل ہڑتال ہے، کاروبار بند ہے، علی گیلانی، میر واعظ عمر فاروق سمیت دیگر رہنماؤں کو ان کے گھروں میں نظر بند کر دیا گیا۔ مشعال ملک کا کہنا ہے کہ مودی کے دورے پرمقبوضہ کشمیر کومفلوج کر دیا گیا ہے۔

 

بھارتی وزیرِ اعظم نریندرمودی کےدورے پر مقبوضہ وادی میں کشمیری عوام کیلئے مشکلات کے پہاڑ کھڑے کر دیئے گئے۔ حریت رہنماء سید علی گیلانی، میر واعظ عمر فاروق سمیت آل پارٹیزحریت کانفرنس کی کشمیری قیادت کو گھروں میں نظر بند کر دیا گیا۔ قابض فوج نے مقبوضہ وادی چھاؤنی میں بدل دی۔ موبائل فون اور انٹرنیٹ سروس معطل ہے۔

 

قابض انتظامیہ نے شیر کشمیر انٹرنیشنل کانفرنس سینٹر کے اطراف پر شہریوں کا آزادانہ سفر ناممکن بنا دیا۔ کانفرنس سینٹر کو جانیوالے راستوں پر فوج اور پولیس کے دستے تعینات ہیں جبکہ ٹریفک پر پابندی ہے۔ بنی ہال سے بارامولا تک ٹرین سروس بھی معطل ہے۔ بھارتی انتظامیہ نے دستاویزات کے باوجود سیکڑوں موٹر سائیکلیں ضبط کر لیں۔

 

حریت رہنماء یاسین ملک کی اہلیہ مشعال ملک کا کہنا ہے کہ مودی کے دورے پر مقبوضہ کشمیر کو مفلوج کر دیا گیا ہے۔ کشمیری قیادت کا کہنا ہے کہ مودی حکومت نے 5سال مقبوضہ کشمیر میں ظلم کے پہاڑتوڑے، ماورائے عدالت قتل، گرفتاریوں کی ذمے دار حکومت کا استقبال احتجاج سے کیا جائے گا۔

عطاء سبحانی  2 ماه پہلے

متعلقہ خبریں