آئندہ مالی سال کے دوران نالج اکانومی، زراعت، توانائی کے شعبوں پر توجہ دی جائیگی، پی ایس ڈی پی

اسلام آباد (پبلک نیوز) وزیرِ اعظم عمران خان کی زیر صدارت پبلک سیکٹر ڈویلپمنٹ پروگرام برائے مالی سال 2019-20 پر اعلیٰ سطح اجلاس، وزیرِ منصوبہ بندی مخدوم خسرو بختیار، مشیر خزانہ عبدالحفیظ شیخ سمیت دیگر کی شرکت، وزیرِ اعظم کو آئندہ مالی سال کے لیے شروع کیے جانے والے نئے منصوبوں کے حوالے سے بریفنگ۔

تفصیلات کے مطابق وزیراعظم کو پبلک سیکٹر ڈویلپمنٹ پروگرام کے تحت جاری منصوبوں کی تکمیل کے حوالے سے بریفنگ دی گئی۔ جس میں بتایا گیا کہ آئندہ مالی سال کے دوران نالج اکانومی کے فروغ، زراعت، توانائی کے شعبوں پر توجہ دی جارہی ہے۔ مالی سال کے دوران ملک کے کم ترقی یافتہ علاقوں کی ترقی پر خصوصی توجہ دی جا رہی ہے۔

اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے وزیر اعظم نے کہا کہ اقتصادی ترقی اس وقت تک مکمل نہیں ہو سکتی جب تک پس ماندہ علاقوں کو ملک کے دیگر علاقوں کے برابر نہ لایا جائے۔ معاشی ترقی کے لیے ضروری ہے کہ نالج اکانومی کو فروغ دیا جائے۔

انھوں نے ہدایت کی کہ زرعی شعبہ میں جدت اور جدید ٹیکنالوجی کو متعارف کرایا جائے۔ ماضی میں پی ایس ڈی پی پروگرام کے تحت مختلف منصوبے شروع کر دیئے جاتے تھے۔ منصوبوں کی تکمیل اور فعالیت پر توجہ نہیں دی جاتی تھی۔ اس کے باعث منصوبوں کی لاگت میں بے پناہ اضافہ دیکھنے میں آتا تھا۔

وزیراعظم نے کراچی کے لیے صوبائی اور مقامی حکومت کی مشاورت سے مربوط منصوبہ پر کام کرنے کی ہدایت کی۔ وزیر اعظم نے وزیر منصوبہ بندی کو ہدایت کی کہ شروع کیے جانے والے ہر منصوبہ کی تکمیل اور فعالیت کے پہلو پر خصوصی توجہ دی جائے۔

احمد علی کیف  3 ماه پہلے

متعلقہ خبریں