تحریک انصاف کور کمیٹی نے مولانا فضل الرحمان سے مذاکرات کا فیصلہ کر لیا

اسلام آباد(پبلک نیوز) مولانا فضل الرحمان سے مذاکرات کا فیصلہ، وزیراعظم عمران خان نے وزیر دفاع پرویز خٹک کو سربراہ بناتے ہوئے ارکان کے انتخاب کی ہدایت کر دی، وزیراعظم عمران خان کی زیر صدارت تحریک انصاف کی کورکمیٹی کا اجلاس۔ کمیٹی دیگر اپوزیشن جماعتوں سے بھی رابطے کرے گی۔

 

تحریک انصاف کور کمیٹی نے مولانا فضل الرحمان سے مذاکرات کا فیصلہ، وزیراعظم عمران خان کی زیر صدارت تحریک انصاف کی کورکمیٹی کا اجلاس ہوا۔ ملکی سیاسی اور معاشی صورتحال پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ وزیراعظم نے جے یو آئی (ف) کے آزادی مارچ کے حوالے سے وزیردفاع پرویز خٹک کو ذمہ داری دے دی، ہدایت کی کہ آزادی مارچ کے سیاسی حل کے لیے پرویز خٹک کمیٹی کے ارکان کا انتخاب خود کریں۔ وزیراعظم نے کہا جمعیت علمائے اسلام کے ساتھ سیاسی حل کے لئے مذاکرات کرنے میں کوئی مضائقہ نہیں۔

 

ذرائع کے مطابق حکومتی مذاکراتی کمیٹی میں چاروں صوبوں کے نمائندے ہوں گے۔ مذاکراتی کمیٹی دوسری اپوزیشن جماعتوں سے بھی رابطے کرے گی۔ وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی نے بھی مذاکراتی کمیٹی کی تصدیق کر دی۔ انہوں نے کہا کہ مذاکرات کی خواہش کو کوئی کمزوری نہ سمجھے، معاملے کا سیاسی حل چاہتے ہیں۔ دھرنوں سے حکومت نہیں جاتی، یہ ہمارا تجربہ ہے۔

 

وزیرخارجہ نے کہا کور کمیٹی نے نوکریاں نہ دینے سے متعلق بیان پر وفاقی وزیر فواد چودھری سے وضاحت طلب کی ہے، ان کا مؤقف تھا کہ ان کا بیان توڑ مروڑ کر پیش کیا گیا۔ شاہ محمود قریشی نے کہا کہ پاکستان کی کوششوں سے ایران اور سعودی عرب بات چیت کے لیے تیار ہیں۔ جنگ کے بادل چھٹتے نظرآرہے ہیں۔ ایران اور سعودی عرب نے مسئلہ کشمیر پر پاکستانی موقف کی پھر تائید کی ہے۔

عطاء سبحانی  1 ماه پہلے

متعلقہ خبریں