پی ٹی آئی حکومت پہلے سال کوئی بھی معاشی ہدف حاصل نہ کر سکی: قومی اقتصادی سروے

اسلام آباد (پبلک نیوز) قومی اقتصادی سروے کی رپورٹ منظر عام پر آ گئی۔ سروے کے مطابق پاکستان تحریک انصاف حکومت پہلے سال کی کارکردگی مایوس کن رہی۔ پی ٹی آئی حکومت کو کوئی معاشی ہدف حاصل نہ ہوا۔

اقتصادی سروے کے مطابق فی کس آمدن، سرمایہ کاری، بچت اور مہنگائی سمیت کوئی ہدف بھی حاصل نہ ہو سکا۔ ڈالر کی قدر میں غیر معمولی اضافے سے فی کس آمدنی میں 136ڈالر کی کمی ہوئی۔ فی کس آمدن 1652 ڈالر سے کم ہو کر 1516 تک پہنچ گئی۔

جاری کردہ اعدادوشمار کے مطابق روپے میں فی کس آمدن ایک لاکھ 81 ہزار روپے سے بڑھ کر دو لاکھ چھ ہزار روپے تک پہنچ گئی۔ ملکی معیشت کا حجم 313 ارب ڈالر سے کم ہو کر 291 ارب ڈالر تک پہنچ گیا۔ جی ڈی پی میں سرمایہ کاری  کا تناسب 17.2فیصد کے برعکس  15.4 فیصد رہا۔

سروے کے مطابق نجی شعبے میں سرمایہ کاری کا تناسب 10.8فیصد ہدف کےبرعکس 9.8 فیصد رہا۔ سرکاری شعبے میں سرمایہ کاری 4.8فیصد ہدف کے برعکس 4 فیصد رہا۔ فکس انویسٹمنٹ 15.6فیصد ہدف کے برعکس 13.8فیصد رہا۔ جی ڈی پی میں بچتوں کا تناسب 13.1 فیصد ہدف کے برعکس 11.1 فیصد رہا۔

اعدادو شمار کے مطابق رواں مالی سال کے دوران مہنگائی 6فیصد ہدف کے برعکس 7.5 فیصد رہی۔ رواں مالی سال کے دوران نو ماہ میں ترسیلات زر میں 8.7 فیصد ہی اضافہ ہو سکا۔ جی ڈی پی میں کرنٹ اکاونٹ خسارے کا تناسب نو ماہ5.7 فیصد سے کم ہو کر 4.4 فیصد تک پہنچ گیا ہے۔

قومی اقتصادی سروے کے مطابق رواں مالی سال کے نو ماہ میں تجارتی خسارہ 21.3ارب ڈالر تک پہنچ گیا۔ اس دوران برآمدات 18 ارب ڈالر اور درآمدات 39.3 ارب ڈالر رہیں۔

احمد علی کیف  2 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں