نئی حکومت کا ایک اور نیا فیصلہ، جنوری میں نیا منی بجٹ لانے کا عندیہ دیدیا

اسلام آباد (پبلک نیوز) نئے سال آتے ہی نیا منی بجٹ لایا جائے گا۔ وزیر خزانہ اسد عمر نے جنوری میں نیا منی بجٹ لانے کا عندیہ دے دیا۔

تفصیلات کے مطابق سینیٹر فاروق ایچ نائیک کی زیر صدارت سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے خزانہ کا اجلاس ہوا جس میں وزیر خزانہ اسد عمر اور گورنر اسٹیٹ بینک نے کمیٹی کو بریفنگ دی۔

بریفنگ کے دوران وزیر خزانہ نے بتایا کہ ہو سکتا ہے جنوری میں منی بجٹ لائیں، تاہم ابھی اس حوالے سے جائزہ لیا جا رہا ہے۔ منی بجٹ میں ٹیکس بڑھانے کی تجویز ہے۔

اسد عمر کا کہنا تھا کہ پاکستان کی معیشت عالمی معیشت کا مقابلہ نہیں کر رہی، معیشت کوچلانے کے لیے ٹیکس  بڑھائے جا سکتے ہیں۔ ٹیکس ری فنڈز کے لیے بانڈز جاری کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ ٹیکس ری فنڈز رواں سال کلیئر کردیں گے۔

واضح رہے کہ پاکستان تحریک انصاف کی حکومت نے اقتدار سنبھالنے کے کچھ روز بعد ترمیم شدہ مالیاتی بل پیش کیا تھا جس میں سگریٹ، مہنگے موبائل فون اور لگژری آئٹم پر ڈیوٹی میں اضافہ کیا گیا تھا۔

احمد علی کیف  4 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں