حکومت نے تیل کی قیمتیں بڑھانے کا فیصلہ مؤخر کر دیا

اسلام آباد (پبلک نیوز) معاون خصوصی برائے اطلاعات فردوس عاشق اعوان کی وفاقی وزیر فیصل واڈا کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ کابینہ اجلاس میں 13 نکاتی ایجنڈا پر غور کیا گیا۔ وزیراعظم عمران خان کو چین کے کامیاب دورے پر کابینہ نے مبارکباد دی۔

 

فردوس عاشق اعوان کا کہنا تھا کہ دورہ چین میں باہمی تجارت کے فروغ اور اہم امور زیر غور آئے۔ وزیراعظم کے دورے کے دوران ایم ون ریلوے منصوبے اور فری تجارت کے منصوبوں پر دستخط ہوئے۔ کابینہ نے متفقہ طور پر فیصلہ کیا ہے وفاقی اداروں میں رمضان میں کام کے اوقات کار 10 سے 4 بجے ہوں گے۔

 

ان کا کہنا تھا کہ خیبرپختونخواہ طرز کا ہی پنجاب میں بلدیاتی نظام لایا جا رہا ہے۔ پنجاب میں لوکل گورنمنٹ کے نظام پر کابینہ کو اعتماد میں لیا گیا۔ فوری اور جلد انصاف کی فراہمی کے لیے قانون میں ترمیم کی جا رہی ہے۔ خواتین کے وراثتی حقوق سے متعلق بل لانے کا فیصلہ کیا گیا۔ اداروں میں کرپشن کے خاتمے کے لیے وسل بلور بل لایا جا رہا ہے۔ بچوں کے ساتھ زیادتی کو روکنے کے لیے زیب الرٹ کے نام سے بل لایا جا رہا ہے۔

 

معاون خصوصی برائے اطلاعات کا کہنا تھا کہ عدالتی اصلاحات سے متعلق بھی بل ایوان میں لے کر آ رہے ہیں۔ رمضان المبارک میں لوڈ شیڈنگ کے خاتمے کے لیے خصوصی کمیٹی بنائی گئی ہے۔ 1300 ارب گردشی قرضوں کا معاملہ بھی کابینہ اجلاس میں زیر غور آیا۔ حکومت نے تیل کی قیمتیں بڑھانے کا فیصلہ موخر کر دیا۔ وزیراعظم نے تیل کی قیمتوں میں اضافے کا معاملہ ای سی سی کو بھیج دیا ہے۔

 

فردوس عاشق اعوان کا کہنا تھا کہ سیاحت کے ساتھ پاکستان کی ترقی جڑی ہے۔ 1300 ارب روپے کے گردشی قرضوں کے آڈٹ کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ پی ٹی ایم کے اندر ایسے کچھ عناصر گھس گئے جو بیرونی آقاوں کے اشاروں پر چل رہے۔ فاٹا کی عوام اور نوجوانوں نے قربانیاں دی ہیں۔ جن لوگوں نے قربانیاں دی ہیں وہ ہمارا اثاثہ ہیں۔ پاکستان کے قومی مفاد کو داو پر لگانے والوں کے خلاف زیرو ٹالرنس ہے۔

 

اس موقع پر موجود وزیر آبی وسائل فیصل واوڈا نے 2 مئی کو مہمند ڈیم کا افتتاح کرنے کا اعلان کیا۔ ان کا کہنا تھا کہ وزیر اعظم دو مئی کو مہمند ڈیم کا افتتاح کرنے جا رہے ہیں۔ سب کی سیاست کی قبر پر جھنڈا گاڑھ دیا ہے۔ وزیراعظم مہمند ڈیم کا سنگ بنیاد رکھیں گے۔ آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ اور سابق چیف جسٹس ثاقب نثار بھی تقریب میں شرکت کریں گے۔ مہمند ڈیم کا 30 فیصد ٹھیکہ ڈیسکون کمپنی اور 70 فیصد چین کی کمپنی کے پاس ہے۔ ایوب خان کے زمانے میں بہت ڈیمز بنے تھے۔ ڈیمز کے حوالے سے بیرونی دشمنوں کے ساتھ ساتھ اندرونی دشمن بھی موجود ہیں۔

حارث افضل  2 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں