کراچی: پانی کے تنازع پر فائرنگ کے دوران پی ٹی آئی رہنماء رمضان گھانچی زخمی

کراچی( پبلک نیوز) کراچی کے علاقے پرانا حاجی کیمپ میں پانی کے تنازع پر رکن صوبائی اسمبلی اور پی ٹی آئی رہنماء رمضان گھانچی پر فائرنگ، رہنماء پی ٹی آئی گولی لگنے سے زخمی، فوری طور پر سول ہسپتال منتقل کردیا گیا۔

 

شہرِ قائد کے علاقے پرانا حاجی کیمپ میں پانی کے تنازع پر جھگڑے کے دوران فائرنگ سے پی ٹی آئی کے رکن صوبائی اسمبلی رمضان گھانچی کی ٹانگ میں گولی لگ گئی، انہیں زخمی حالت میں فوری طور پر سول ہسپتال منتقل کر دیا گیا۔ فائرنگ کے الزام میں ٹمبر مارکیٹ کے ایک عہدیدار کو بیٹے سمیت حراست میں لے لیا گیا۔

ایس ایس پی سٹی مقدس حیدر نے کہا کہ فائرنگ کا واقعہ پانی کی لائن کے تنازع کی وجہ سے پیش آیا۔ پی ٹی آئی رہنماء رمضان گھانچی کو سول ہسپتال منتقل کر دیا گیا، جہاں پر ڈاکٹروں نے ان کی حالت خطرے سے باہر بتائی ہے۔ واقعہ کا مقدمہ درج کرتے ہوئے فائرنگ کے الزام میں ٹمبر مارکیٹ کے عہدیدار سلیمان سومرو اور ان کے بیٹے کو حراست میں لے لیا گیا ہے۔ جائے وقوعہ سے فائرنگ کی گئی نائن ایم ایم پستول کی 2 گولیوں کے خول برآمد ہوئے۔

 

دوسری طرف گورنر سندھ عمران اسماعیل نے ایم پی اے رمضان گھانچی کی عیادت کی اور گلدستہ پیش کیا، میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے گورنر سندھ عمران اسماعیل کا کہنا تھا کہ سندھ حکومت کو معاملے پر ایکشن لینا چاہیے اور ارکان اسمبلی کو سکیورٹی فراہم کی جائے۔ واضح رہے رمضان گھانچی حلقہ پی ایس 109 کراچی ساوتھ 3 سے رکن سندھ اسمبلی ہیں۔

عطاء سبحانی  3 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں