تحریک انصاف نے رانا تنویر کی بطور پی اے سی چیئرمین تعیناتی مسترد کردی

اسلام آباد (پبلک نیوز) وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے رانا تنویر کی بطور پبلک اکاؤنٹس کمیٹی چیئرمین تعیناتی کو مسترد کر دیا۔ قومی اسمبلی میں اظہار خیال کے دوران شاہ محمود قریشی نے کہا کہ شہبازشریف کو تبدیل کرنے کے لیے اپوزیشن سے مشاورت نہیں کی گئی۔

ان کا کہنا تھا کہ میثاق جمہوریت کا تقاضا تھا قائد حزب اختلاب کو عہدہ دیا جائے۔ اسپیکر قومی اسمبلی نے فہم و فراست سے پی اے سی کا مسئلہ حل کیا حالانکہ اس مسئلہ پر فواد چودھری اور شیخ رشید کے طعنے بھی سننا پڑے۔

انھوں نے مزید کہا کہ تاہم سب کے کردار کی وجہ سے یہ مسئلہ حل ہوا۔ شہباز شریف نے پی اے سی اس طرح منتقل کر دی، جیسے وراثتی انتقال کیا جاتا ہے۔ کس تقاضہ اور کس اصول کے تحت یہ فیصلہ کیا گیا؟

دوسری جانب تحریک انصاف نے مریم نواز کی ن لیگ کی نائب صدارت عدالت میں چیلنج کرنے کا فیصلہ کر لیا۔ شاہ محمود قریشی نے اس حوالے سے کہا کہ عدالت سے سزا یافتہ ملزم کو پارٹی عہدہ نہیں دیا جا سکتا۔ مریم نواز کو سزا معطلی کا عارضی ریلیف ملا ہے، سزا ختم نہیں ہوئی۔ مریم نواز کو ن لیگ کی نائب صدر مقرر کرنے پر الیکشن کمیشن سے رجوع کرنے پر بھی غور ہو گا۔

احمد علی کیف  2 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں