پی ٹی ایم رہنماء محسن داوڑ کو شمالی وزیرستان سے گرفتار کر لیا گیا

اسلام آباد(سلمان علی اعوان) رکن قومی اسمبلی محسن داوڑ کو شمالی وزیرستان سے گرفتار کر لیا گیا، پی ٹی ایم کے رہنماء محسن داوڑ خرکمر چیک پوسٹ پر حملے کے بعد سے مفرور تھے۔

 

ذرائع کے مطابق رکن قومی اسمبلی محسن داوڑ شمالی وزیرستان سے گرفتار کیا جا چکا ہے۔ خرکمر چیک پوسٹ پر حملے کے بعد پی ٹی ایم کے رہنماء محسن داوڑ مفرور ہو گئے تھے جبکہ رکن اسمبلی علی وزیر سمیت 8 افراد کو حراست میں لے لیا گیا تھا۔ خرکمر چیک پوسٹ پر حملے میں پانچ جوان زخمی ہوئے تھے۔ محسن داوڑ ملک دشمن سرگرمیوں میں ملوث ہے اور افغان سے افغان خفیہ ادارہ این ڈی ایس سے بھی تعلق ہے، وہ بھی بلکل سامنے آ چکا ہے۔ آزاد ذرائع سے محسن داوڑ کی گرفتاری کی تصدیق نہیں ہوئی ہے۔

خرکمر چیک پوسٹ پر حملے کے عینی شاہدین اور پاک فوج کے عملے کے بیانات کی روشنی مین یہی بات ثابت ہوتی ہے کہ محسن داوڑ علاقے کے لوگوں کو اکسا کر لے کر آئے تھے۔ ایف آئی آر ایس ایچ او تھانہ سی ٹی ڈی بنوں انسپکٹر محمد جلیل خان کی مدعیت میں درج کی گئی ہے۔ مقدمے میں دہشت گردی، 302، 324 اور دیگر سمیت کل 10 دفعات شامل کی گئی ہیں۔ ایف آئی آر میں لکھا گیا ہے کہ محسن داوڑ اور علی وزیر نے مسلح ساتھیوں سمیت سکیورٹی چیک پوسٹ پر حملہ کیا۔

عطاء سبحانی  2 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں