علیم خان کا نیب کو جمع کرایا گیا تحریری جواب پبلک نیوز نے حاصل کر لیا

لاہور(، شاکر محمود اعوان)علیم خان نے تحریری جواب نیب کو جمع کرا دیا۔ علیم خان کا کہنا ہے کہ نیب کو آف شور کمپنیز سے متعلق تمام ریکارڈ جمع کرا دیا گیا۔ یو اے ای کی کمپنیز کی تشکیل اور فنڈز کا بھی بتایا گیا، علیم خان کے جمع کرائے گئے تحریری جواب کے مطابق دبئی کی کمپنی انہیں والدہ سے وراثت میں ملی۔

 

علیم خان کی جانب سے نیب کو جمع کرایا گیا تحریری جواب پبلک نیوز نے حاصل کر لیا۔ پبلک نیوز کو موصول ہونے والے علیم خان کے تحریری جواب میں کہا گیا ہے کہ 31 جنوری کو آف شورز کمپنی سے متعلق اپنا جواب جمع کرایا۔ نیب کو تحریری جواب میں بتایا کہ 29 جنوری 2018، 26 فروری 2018، 1 مارچ 2018، 27 مارچ 2018، 2 اپریل 10 جولائی 2018 12 جولائی 2018 9 اگست 2018 کو نیب کی جانب سے دیئے گیے سوالات کے جواب جمع کرائے۔

متعلقہ خبر:آف شور کمپنی کیس، نیب نے سینئر صوبائی وزیر عبدالعلیم خان کو گرفتار کر لیا

علیم خان نے تحریری جواب میں کہا کہ ہیکسیم انوسٹمنٹ اورسیز لمیٹیڈ سے متعلق تفصیلی جواب 6 مارچ 2018 کو جمع کرایا،وہ تمام ذرائع بتائے جن سے فلیٹس حاصل کیے، علیم خان نے موقف اختیار کیا کہ ہمیں معلوم نہیں کہ ہمارے خلاف کیا الزامات ہیں البتہ نیب نے جو تفصیلات مانگیں، اسکے مکمل اور تفصیلی جواب دیئے، نیب کے ساتھ مکمل تعاون کے لیے تیار ہیں۔

تحریری جواب میں علیم خان کی جانب سے موقف اختیار کیا گیا کہ وہ نیب کے سیکشن 9 کے تحت کسی بھی غیر قانونی عمل میں ملوث نہیں ہیں۔ نیب کی جانب سے 31 جنوری 2019 کو 3 سوالات پر مبنی سوال نامہ بھیجا گیا۔ جبکہ ان 3 سوالات کے جوابات پہلے ہی نیب کو دے دیے تھے۔

 

تحریری جواب علیم خان نے بتایا کہ دبئی اور یو اے ای میں موجود کمپنیوں سے متلعق تشکیل اور فنڈز کا بتایا، ان کمپنیز کو بنانے کے لیے سرمایا کہاں سے آیا اس کی تفصیل بھی بتائی۔ اس کمپنی کے نام پر دبئی میں جو اثاثے ہیں ان سے متعلق بھی تفصیل بتائی۔ تحریری جواب میں علیم خان نے انکشاف کیا کی دبئی کی آف شور کمپنی ان کو ان کی والدہ سے وراثت میں ملی تھی۔ والدہ کی وفات 19نومبر 2013ء کو ہوئی، لہٰذا وہ دوبئی کی کمپنی سے متعلق تفصیلات نہیں بتا سکتے۔

عطاء سبحانی  1 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں