پنجاب حکومت 9 کھرب 53 ارب 95 کروڑ روپے کی مقروض

 

لاہور (پبلک نیوز) پنجاب کے قرضوں میں تقریبا ڈیڑھ کھرب روپے کا اضافہ ہو گیا ہے۔ 6 ماہ کے دوران پنجاب حکومت کے قرضوں ایک کھرب 40 ارب 76 کروڑ کا اضافہ ہوا ہے۔ اس وقت پنجاب حکومت 9 کھرب 53 ارب 95 کروڑ روپے کی مقروض ہے۔

 

تفصیلات کے مطابق دسمبر 2018 میں پنجاب حکومت 8 کھرب 13 ارب 18 کروڑ کی مقروض تھی۔ 6 ماہ کے دوران پنجاب حکومت کے قرضوں ایک کھرب 40 ارب 76 کروڑ کا اضافہ ہوا۔ اس وقت پنجاب حکومت 9 کھرب 53 ارب 95 کروڑ روپے کی مقروض ہے۔

 

صوبہ بھر کے قرضوں میں 75 ارب کے منصوبوں کی گارنٹیاں شامل نہیں ہیں۔ 9 کھرب 45 ارب بیرونی ممالک کے اور 8 ارب 65 کروڑ ملکی اداروں کے قرضے ہیں۔ پنجاب کے محکموں میں سب سے زیادہ محکمہ ایگری کلچر اینڈ لائیو سٹاک 2 کھرب 82 ارب کا مقروض ہے۔ محکمہ تعلیم 2 کھرب 15 ارب، محکمہ سیاحت 2 کھرب 12 ارب کا اور محکمہ ٹرانسپورٹ ایک کھرب 15 ارب کا مقروض ہے۔

پنجاب انٹرنیشنل ڈویلپمنٹ ایسوسی ایشن کا 3 کھرب 17 ارب کا مقروض ہے۔ ایشین ڈویلپمنٹ بنک کے 2 کھرب 69 ارب پنجاب کے ذمے واجب الادا ہیں۔ ورلڈ بنک کے قرضے ایک کھرب 5 ارب 37 کروڑ، عوامی جمہوریہ چین کے 2 کھرب 7 ارب 35 کروڑ 60 لاکھ کے قرضے پنجاب کے ذمے واجب الادا ہیں۔

 

واضح رہے کہ پنجاب کے قرضوں میں اضافے سے صوبے کے ہر باسی کے قرضوں میں بھی اضافہ ہوا ہے۔ پنجاب کا ہر شہری اس وقت ملکی اور غیر ملکی اداروں کا 8 ہزار 6 سو 71 روپے کا مقروض ہے۔

احمد علی کیف  3 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں