پنجاب پولیس کے افسران سمیت 621 اہکار براہ راست کرپشن میں ملوث

لاہور(ناصر نقوی) قانون کے رکھوالوں نے ہی قانون کی دھجیاں بکھیردیں۔ پنجاب پولیس کے ڈی ایس پیز، انسپکٹرز سمیت درجنوں اہلکاروں کی خلاف قانون سرگرمیوں کا انکشاف ہوا ہے۔ 621 اہلکار براہ راست کرپشن میں ملوث ہیں۔ 6 افراد کو دوران حراست ہلاک کر دیا گیا ہے۔

 

تفصیلات کے مطابق پنجاب پولیس کے 154 ڈی ایس پیز، 1572 انسپکٹرز، 7249 سب انسپکٹرز، 9887 اے ایس آئیز غیر قانونی سرگرمیوں میں ملوث نکلے ہیں۔ 3913 ہیڈ کانسٹیبلز، 53935 کانسٹیبلز سمیت پنجاب پولیس کے شیر جوان قانون کی دھجیاں ہی بکھیرتے رہے۔

 

پنجاب پولیس کے افسران سمیت 621 اہکار براہ راست کرپشن میں ملوث نکلے۔ شیر جوانوں نے 6 افراد کو دوران ہراست ہلاک کر ڈالا۔ پنجاب پولیس کے 326 اہلکاروں کے خلاف مجرمانہ سرگرمیوں سے متعلق مقدمات بھی درج کر لیے گئے ہیں۔ خطرناک مجرموں کےساتھ ملی بھگت کر کے 68 شیر جوانوں نے ان کو فرار ہونے کا موقع فراہم کیا۔

 

قانون کے 87 رکھوالے معصوم افراد کو غیر قانونی تحویل میں رکھنے کے مرتکب قرار دئیے گئے۔ پنجاب پولیس کے ڈی ایس پیز، انسپکٹرز سمیت 641 اہلکار نے وردی کا ناجائز فائدہ اٹھایا۔

 

عطاء سبحانی  1 ماه پہلے

متعلقہ خبریں