کوئٹہ امن دشمنوں کے نشانے پر، دھماکے میں 4 پولیس اہلکار شہید، 11 زخمی

کوئٹہ (پبلک نیوز) امن دشمنوں نے کوئٹہ کو ایک بار پھر خون میں نہلا دیا۔ سٹیلائٹ ٹاؤن کی منی مارکیٹ میں دھماکے سے 4 پولیس اہلکار شہید، 11 افراد زخمی ہوگئے۔

 

رمضان المبارک میں دہشت گردی کی نئی لہر نے پورے ملک کو لپیٹ میں لے لیا۔ لاہور داتا دربار، گوادر کے فائیواسٹار ہوٹل کے بعد کوئٹہ میں دہشت گردوں نے بزدلانہ حملہ کیا۔ تفصیلات کے مطابق کوئٹہ کے علاقے سیٹلائٹ ٹاؤن میں منی مارکیٹ کے قریب دھماکا ہوا۔

 

دھماکے کی تصدیق کرتے ہوئے ڈی آئی جی عبدالرزاق چیمہ کا کہنا تھا کہ منی مارکیٹ کے قریب پولیس موبائل کو نشانہ بنایا گیا جس کے نتیجے میں متعدد اہلکار زخمی ہوئے، ممکنہ طور پر دھماکا خیز مواد موٹر سائیکل میں نصب تھا۔ دھماکے سے مددگار پولیس کی گاڑی مکمل طور پر تباہ ہوگئی۔

 

دھماکے کے بعد ہر طرف افرا تفری پھیل گئی۔ ریسکیو ٹیموں نے موقع پر پہنچ کر زخمی اور لاشوں کو اسپتال منتقل کیا۔ سیکیورٹی اداروں نے علاقے کو گھیرے میں لے لیا اور دھماکے کی جگہ سے شواہد جمع کیے۔ وزیر داخلہ بلوچستان میر ضیا لانگو کا کہنا تھا کہ دھماکا پولیس موبائل کے قریب ہوا، ابتدائی رپورٹ کے مطابق دھماکا خیز مواد نصب کیا گیا تھا۔

 

یاد رہے کہ 6 روز قبل لاہور کے داتا دربار کے باہر کھڑی پولیس موبائل پر بھی خود کش حملہ کیا گیا تھا جس میں 5 پولیس اہلکاروں نے جام شہادت نوش کیا تھا۔

حارث افضل  1 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں