ارشاد رانجھانی کو رحیم شاہ نے ایمبولینس رکوا کر گولیاں ماریں، ڈرائیور کا انکشاف

کراچی (پبلک نیوز) شہر قائد میں قتل ہونے والےارشاد رانجھانی کو یوسی چیئرمین رحیم شاہ نے ایمبولینس رکوا کر گولی ماری۔ حتمی چالان میں ایمبولینس ڈرائیور نے سنسنی خیز انکشاف کر دیا۔

تفصیلات کے مطابق ارشاد رانجھانی کو یوسی چیئرمین رحیم شاہ نے ایمبولینس رکوا کر گولیاں ماریں۔ حتمی چالان میں ایمبولینس ڈرائیور کا سنسنی خیز انکشاف پبلک ہو گیا۔

پولیس نے مقدمے کا حتمی چالان انسداد دہشت گردی عدالت کے روبرو پیش کر دیا۔ جس میں ایمبولینس ڈرائیور کا کہنا تھا کہ وہ تھانہ سے پولیس اہلکار انسپکٹر علی گوہر کے ہمراہ ارشاد رانجھانی کو ہسپتال لے کر روانہ ہوا۔

ملزم رحیم شاہ ان کے پیچھے موٹر سائیکل پر آیا اور آگے آ کر ایمبولینس روکنے کو کہا۔ اس نے پولیس اہلکار سے کچھ بات کی۔ اچانک ایمبولینس کا پچھلا دروازہ کھلا، ایک فائر ہوا اور زخمی کی چیخ و پکار سنائی دی۔

زخمی کو لے کر جناح اسپتال پہنچے تو وہ انتقال کرچکا تھا۔ ملزم رحیم شاہ کے خوف سے وہ پہلے خاموش رہا۔

ڈپٹی پراسیکیوٹر کا کہنا ہے شواہد ملنے کے باوجود چالان سے دہشت گردی کی دفعات ہٹا دی گئیں۔ چالان میں ملزم کے خلاف سیکشن سیون، اے ٹی اے نہیں لگایا گیا۔

 عدالت نے چالان منظور کرتے ہوئے مقدمہ باقاعدہ سماعت کے لیے اے ٹی سی اٹھارہ کو منتقل کر دیا۔

احمد علی کیف  1 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں