منشیات برآمدگی کیس، رانا ثناء اللہ کے جوڈیشل ریمانڈ میں 2 اکتوبر تک توسیع

 

لاہور (پبلک نیوز) منشیات برآمدگی کیس میں رانا ثناء اللہ کے جوڈیشل ریمانڈ میں 02 اکتوبر تک توسیع کر دی گئی ہے۔ عدالت نے رانا ثناء اللہ کی گرفتاری کے وقت سیف سٹی کی بننے والی فوٹیج محفوظ کرنے کی درخواست منظور کر لی ہے۔

 

تفصیلات کے مطابق انسداد منشیات لاہور کی خصوصی عدالت کے جج خالد بشیر نے کیس کی سماعت کی۔ سرکاری وکیل نے بتایا کہ سکیورٹی اور وکلاء ہڑتال کے باعث رانا ثناءاللہ کو عدالت پیش نہیں کیا گیا۔ رانا ثناء اللہ کے وکیل کا کہنا تھا کہ اتنی پولیس کی موجودگی میں ملزم کو پیش کیا جا سکتا تھا۔ انھوں نے کہا کہ ٹرائل کا غیر جانب دار ہونا رانا ثناء اللہ کا قانونی اور آئینی حق ہے۔ سیف سٹی اتھارٹی سے رانا ثناء اللہ کی گرفتاری کی ویڈیو طلب کی جائے۔

 

سرکاری وکیل کا کہنا تھا کہ ملزموں نے فوٹیج کے لیے سیف سٹی کو کوئی درخواست نہیں دی۔ فوٹیج میں صرف گاڑیاں گزرنے کے علاوہ کیا نظر آئے گا۔ جان بوجھ کر کیس کو سیاسی بنایا جا رہا ہے۔ جب کیس شروع ہو گا تو تمام حقائق سامنے آجائیں گے۔ ملزموں کی فوٹیج فراہمی کی درخواست بے بنیاد ہے، مسترد کی جائے۔

 

عدالت نے رانا ثناء اللہ کے جوڈیشل ریمانڈ میں 02 اکتوبر تک توسیع کر دی۔ عدالت نے رانا ثناء اللہ کی گرفتاری کے وقت سیف سٹی کی بننے والی فوٹیج محفوظ کرنے کی درخواست بھی منظور کر لی۔

احمد علی کیف  2 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں