بلاول بھٹو کے وزراء کیخلاف بولنے پر پی ٹی آئی رہنماؤں کا ردعمل

کراچی(پبلک نیوز) چیئرمین پیپلزپارٹی بلاول بھٹو نے کہا ہے کہ کالعدم تنظیموں سے وابستہ وزراء کے خلاف بولنے پر انہیں نیب کا نوٹس آ گیا۔ انہیں قتل کی دھمکیاں دی گئیں اور ریاست مخالف کہا گیا۔ دوسری جانب پی ٹی آئی رہنماؤں اسدعمر اور فیصل جاوید نے بلاول بھٹو کے بیان پر سخت ردعمل دیا ہے۔

 

جعلی بینک اکاؤنٹس کیس، بلاول بھٹو کا نیب راولپنڈی کے سامنے پیش ہونےکا فیصلہ۔ پیپلزپارٹی کے وکلاء، پارٹی رہنماء بھی بلاول کے ہمراہ ہوں گے۔ ذرائع کے مطابق جیالوں کو بھی نیب آفس کے باہرپہنچنے کی ہدایت کی گئی ہے۔ بلاول بھٹو کا کہنا ہے کہ میں نے کالعدم تنظیموں سے وابسطہ وزراء کی برطرفی کا مطالبہ کیا، جس پر مجھے نیب کا نوٹس مل گیا۔ حکومت کی جانب سے مجھے ریاست مخالف کہا گیا، مجھے قتل کی دھمکیاں ملنا بھی حکومت کا ردعمل ہے۔ کالعدم تنظیموں سے وابسطہ وزراء کی موجودگی تک حکومت کو کوئی سنجیدہ نہیں لے گا، ایسے وزراء کو فوری برطرف کیا جائے۔

 

وزیرخزانہ اسدعمر سے بلاول بھٹو کے بیان سے متعلق سوال کیا گیا تو انہوں نے کہا میری الیکشن مہم میں جن تنظیموں نے ساتھ دیا وہ خود دہشت گردی کا شکار رہی ہیں۔ حکومت میں مزے لینے کے بعد بہانے بازی نہیں چلےگی۔ سینیٹرفیصل جاوید نے بلاول بھٹو کے بیان پر ردعمل میں کہا بلاول پاکستان کی منفی تصویر کشی کر رہے ہیں۔ پاکستان پوری دنیا کے لیے امن کا پیامبر بن کر ابھرا ہے، پاکستان مخالف حلقوں کوخوش کرنےکی کوشش پر بلاول کوشرم آنی چاہیے۔

عطاء سبحانی  4 ماه پہلے

متعلقہ خبریں