وزارتوں میں ردو بدل کی وجوہات پبلک ہو گئیں

پبلک نیوز: وزارتوں میں ردو بدل کی وجوہات پبلک ہو گئیں۔ محکمانہ کارکردگی، میڈیا رپورٹس اور عوامی رائے نے وفاقی کابینہ میں تبدیلی کی ہوا چلا دی۔ بعض وزراء کی کارکردگی پر وزیر اعظم سخت نالاں تھے۔

تفصیلات کے مطابق آخر کیا وجوہات وزارتوں میں ردو بدل کا سبب بنیں۔ پبلک نیوز اندرونی کہانی منظر عام پر لے آ گیا۔ محکمانہ کارکردگی کی خفیہ رپورٹس، میڈیا رپورٹس اور عوامی رائے نے وفاقی کابینہ میں تبدیلی کی راہ ہموار کی۔ بعض وزراء کی کارکردگی پر وزیر اعظم سخت نالاں تھے۔

انہیں گزشتہ ماہ ہی ہٹانے کا فیصلہ کر لیا تھا۔ ایمنسٹی اسکیم، ایف بی آر کی ناکامی اور ڈالر کی اونچی اڑان اسد عمر کی وازرت لے گیا۔ وزیراعظم نے حکومتی ارکان اورمیڈیاکے دباؤ پر نہ چاہتے ہوئے اپنے دیرینہ ساتھی اسد عمر کوعہدے سے ہٹایا۔

گیس بلوں پر حکومت کو غلام سرور خان کو بدلنے کا کڑوا گھونٹ بھرنا پڑا۔ وزارت اطلاعات سے نکالے گئے فواد چودھری توقعات پر پورا نہ اترسکے۔ شہریار آفریدی اختیارات کے باوجودوزارت داخلہ امور کے بہتر طور پر سرانجام نہ دے سکے۔

فردوس عاشق اعوان کو وزیراطلاعات بنانے کا کا فیصلہ وزیراعظم نے ایک ماہ پہلے کرلیا تھا۔ اعظم سواتی، اعجاز شاہ اور حفیظ شیخ کو وزارتیں دینے کا فیصلہ پارٹی میں اتفاق رائے سے کیا گیا۔

احمد علی کیف  1 ماه پہلے

متعلقہ خبریں