میٹرو بس سروس لاگت پر رپورٹ پنجاب اسمبلی اجلاس میں پیش کر دی گئی

لاہور(خالد محمود خالد) مسلم لیگ ن کا شروع دن سے یہ دعویٰ ہے کہ میٹرو بس سروس کی لاگت 30 ارب روپے ہے جس کے بارے میں آج پنجاب اسمبلی میں میٹرو بس منصوبے کی لاگت کی رپورٹ پیش کر دی گئی۔

 

ڈپٹی اسپیکر دوست محمد مزاری کی زیرصدارت ہونے والے پنجاب اسمبلی اجلاس میں وقفہ سوالات میں میٹرو بس منصوبے کی لاگت کی رپورٹ پیش کر دی گئی۔ رپورٹ کے مطابق میٹرو بس منصوبے پر تقریبا 30 ارب روپے خرچ ہوئے۔ میٹرو بس سروس کا آغاز 10فروری 2013 میں ہوا تھا اور یہ پراجیکٹ لاہور ٹرانسپورٹ کمپنی کی ہدایت کے تحت 27 فروری 2012 میں شروع کیا گیا۔

رپورٹ کے مطابق لاہور میٹرو بس کے تعمیراتی کام کی ذمہ داری ٹیپا ایل ڈی اے کے سپرد تھی اور یہ منصوبہ پیپرا رولز کے تحت دیا گیا۔ میٹرو بس پراجیکٹ پر اس وقت 64 بسیں چلائی جارہی ہیں۔ بسوں کی پروکیورمنٹ ٹرانسپورٹ ڈیپارٹمنٹ نے بزریعہ 2009ء پیپرا رولز کے مطابق کی۔ لاہور میٹرو بس منصوبے کو چلانے کی مد میں 2018ء اور 2017ء میں حکومت پنجاب نے26۔2 ارب روپے سبسڈی ادا کی، لیکن اس کے جاریہ اخراجات 32 ارب روپے ہیں۔

عطاء سبحانی  2 ماه پہلے

متعلقہ خبریں