گواہوں کا شناخت سے انکار، سانحہ ساہیوال کے تمام ملزمان بری

لاہور (پبلک نیوز) انسداد دہشت گردی عدالت نے سانحہ ساہیوال کیس کا فیصلہ سنا دیا۔ گواہوں کے منحرف ہونے پر عدالت نے تمام ملزمان کو شک کا فائدہ دیتے ہوئے بری کر دیا۔

 

انسداد دہشت گردی عدالت کے جج ارشد حسین بھٹہ نے سانحہ ساہیوال کیس کا فیصلہ سنایا۔ عدالت نے چھ ملزمان صفدر، رمضان، احسن، سیف اللہ، حسنین اور ناصر کو ناکافی گواہوں اور ثبوتوں کی بناء پر بری کردیا۔

 

ملزموں کے خلاف دہشت گردی کی دفعات کے تحت مقدمہ درج تھا، مقدمے میں 49 گواہ تھے۔ مقتول خلیل کے بچوں عمیر، منیبہ اور بھائی جلیل نے بیانات ریکارڈ کرائے تھے۔ مقتول ذیشان کے بھائی نے بھی بطور گواہ بیان قلمبند کرایا تھا۔ عدالت میں گواہوں نے ملزموں کی شناخت سے انکار کر دیا تھا۔

 

وقوعہ کا مقدمہ ساہیوال میں درج کر کے ٹرائل ساہیوال کی دہشت گردی عدالت میں شروع کیا گیا۔ مقتولین کے ورثاء کی درخواست پر کیس کو ساہیوال سے لاہور منتقل کیا گیا۔ سی ٹی ڈی کے ملزم اہلکاروں پر مقتول خلیل کی گاڑی پر فائرنگ کرنے کا الزام تھا۔ اس سانحہ میں مقتول خلیل کی اہلیہ اور  سمیت چار افراد جان سے ہاتھ دھو بیٹھے تھے۔

احمد علی کیف  3 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں