"سانحہ ساہیوال پر بہت شور اٹھا تھا پھر اچانک منظر سے غائب ہو گیا"

سانحہ ساہیوال پر بہت شور اٹھا تھا۔ اور پھراچانک منظرسے غائب ہوگیا۔ سپریم کورٹ میں امل ہلاکت کیس میں سانحہ ساہیوال کا ذکرچھڑ گیا۔ جسٹس فائز عیسی نے استفسار کیا۔ کیا کسی کوسانحہ ساہیوال کیس کا علم ہے؟

تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ آف پاکستان میں امل ہلاکت ازخود نوٹس کی سماعت کے دوران سانحہ ساہیوال کا تذکرہ چھڑ گیا۔ جسٹس قاضی فائز عیسیٰ نے سوال کیا کہ کسی کوسانحہ ساہیوال کیس کا علم ہے؟ سانحہ ساہیوال پر بہت شور اٹھا تھا۔ سانحہ ساہیوال اچانک منظر سے غائب ہو گیا۔ فیصل صدیقی نے بتایا کہ سنا تھا لاہور ہائیکورٹ نے جوڈیشل مجسٹریٹ تعینات کیا ہے۔ انکوائری رپورٹ کا علم نہیں۔

جسٹس اعجاز الاحسن نے کہا کہ سانحہ ساہیوال اور امل کیس میں بہت فرق ہے۔ ساہیوال میں جاں بحق افرادپردہشتگردی کا الزام تھا، انسداد دہشتگردی فورس نے ٹارگٹ کرکے فائرنگ کی تھی، امل معصوم بچی تھی جوراہ چلتے پولیس فائرنگ کانشانہ بنی۔

سندھ حکومت نے زخمیوں کی طبی امدادکے قانون کامسودہ پیش کر دیا۔ تحقیقاتی کمیٹی کی سفارشات پر سندھ حکومت سے جواب طلب کر لیا۔ سپریم کورٹ نے سماعت چوبیس اپریل تک ملتوی کر دی۔

احمد علی کیف  3 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں