علیمہ خان کے نام کیساتھ شریف یا بھٹو ہوتا تو وہ جیل میں ہوتیں: سمیع اللہ خان

لاہور (خالد محمود خالد/طاہرعمران) لاہورمیں بوندا باندی اور شدید ٹھنڈ کے باوجود پنجاب اسمبلی میں سیاسی پارہ ہائی رہا۔ حکومتی اور اپوزیشن ارکان کی لفظی گولہ باری، سمیع اللہ خاں نے کہا کہ علیمہ خان کے نام کے ساتھ بھٹو یا شریف لگا ہوتا تو وہ جیل میں ہوتیں۔ میاں محمود الرشید نے اپوزیشن کو لتاڑ کر حساب برابر کردیا۔

تفصیلات کے مطابق پنجاب اسمبلی کااجلاس شروع ہوا تو نقطہ اعتراض پر پیپلز پارٹی کے حسن مرتضیٰ نے کہا کہ اب تک سپریم کورٹ کے احکامات کے باوجود بلاول بھٹو اور مراد علی شاہ کا نام ای سی ایل سے نہیں نکالا گیا۔ حسن مرتضیٰ کے نقطہ اعتراض پر میاں محمود الرشید نے کہا کہ جو کرپٹ ہو گا وہ نہیں بچ پائے گا۔ جو بے گناہ ہو گا اس کا نام ای سی ایل سے نکال دیا جائے گا۔

ن لیگ کے رکن اسمبلی سمیع اللہ خان نے حکومت پر تابڑ توڑ حملے کرتے ہوئے کہا کہ اگر علیمہ خان کے نام کے آگے خان کے بجائے شریف یا بھٹو ہوتا تو وہ جیل میں ہوتیں۔ وزیر پراسیکیوشن میاں محمود الرشید نے اپوزیشن کو بھرپور جواب دیتے ہوئے کہا کہ نوازشریف اور زرداری ایک ہی گاڑی کے سوار ہیں۔ اب کسی ڈاکو کو نہیں چھوڑیں گے۔ کرپشن کرنے والے ضرور گرفتار ہوں گے۔

اجلاس کا ایجنڈا مکمل ہونے پر قائم مقام اسپیکر نے اجلاس سوموار کی سہ پہر تین بجے تک ملتوی کر دیا۔

احمد علی کیف  2 ماه پہلے

متعلقہ خبریں