عدالت نے وفاقی حکومت سے نیا گاج ڈیم کی تعمیر سے متعلق ٹائم شیڈول طلب کر لیا

لاہور(پبلک نیوز) سپریم کورٹ لاہور رجسٹری میں نیا گاج ڈیم کی تعمیر سے متعلق کیس کی سماعت، چیف جسٹس نے وفاقی حکومت سے نیا گاج ڈیم کی تعمیر سے متعلق ٹائم شیڈول طلب کر لیا گیا۔

 

سپریم کورٹ لاہور رجسٹری میں نیا گاج ڈیم کی تعمیر سے متعلق کیس کی سماعت ہوئی، چیف جسٹس ثاقب کی سربراہی میں کس کی سماعت ہوئی، وفاقی وزیر پلاننگ اینڈ ڈویلپمنٹ خسرو بختیار اور فیصل واڈا پیش ہوئے۔ جیف جسٹس نے نے کہا کہ آپ سب کو افتتاح کرنے کی ضرورت ہوتی ہے، ہمیں ڈیم کی تعمیر کا ٹائم فریم دے دیں، جس پر خسرو بختیار نے کہا کہ آبی وسائل کو خاص اہمیت دے رہے ہیں، بھاشا اور مہمند ڈیم بھی ہماری ترجیح میں شامل ہیں۔

 

وفاقی وزیر پلاننگ اینڈ ڈویلپمنٹ نے کہا کہ سندھ حکومت کو منچھر جھیل کی وجہ سے منصوبے پر تحفظات ہیں،جس جسٹس نے کہا کہ اگر عدالت مداخلت نہ کرے تو معاملات التواء کا شکار ہو جاتے ہیں۔ پنجاب میں بہت معاملات میں سمری وزیراعلیٰ پنجاب کے پاس پڑی رہتی ہے۔ وزیراعلی پنجاب پاس بہت سی سمریز ایسی ہیں جو دو گھنٹے بھی نہیں رکنی چاہیے۔

 

وفاقی وزیر خسرو بختیار کا کہنا تھا کہ نیا گاج ڈیم کیلئے وزرات خزانہ اور وزارت پانی بجلی سے رابطہ کررہے ہیں۔ جس پر چیف جسٹس نے کہا کابینہ ہوتی کس لیے ہے آپ اپنے ساتھی وزیر سے براہ راست بات کر سکتے ہیں۔ پانی اور صحت کے معاملات میں التواء برداشت نہیں کیا جائے گا۔ چیف جسٹس نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ تمام سٹیک ہولڈرز کو ساتھ لیکر چلیں۔ بیوروکریسی کے معاملات کی وجہ سے معاملہ التواء کا شکار نہ ہو۔ چیف جسٹس نے وفاقی حکومت سے نیا گاج ڈیم کی تعمیر سے متعلق ٹائم شیڈول طلب کر لیا۔

عطاء سبحانی  3 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں