کراچی: سکولوں کی حالت بدترین، بلدیاتی نمائندوں نے ہاتھ کھڑے کر دیے

 

کراچی (پبلک نیوز) شہر قائد کے علاقہ لانڈھی میں واقع سکول کی حالت بدترین صورت اختیار کرگئی۔ جگہ جگہ  کچرے کے انبار، گڑوں سے بہتے پانی نے بلدیاتی انتظامات کی ناقص کارکردگی کی قلعی کھول دی۔ 

تفصیلات کے مطابق کراچی کے علاقہ لانڈھی (بھینس کالونی) میں واقع سکول کی حالت بدترین ہے۔ خستہ حال سڑکیں، گندگی کے انبار، سیوریج کا گندا جا بجا جا بہتا گندا پانی، درسگاہ آنے والے مستقبل کے معماروں کے لیے رکاوٹ بن گیا۔

سکول کے سامنے گزشتہ 2برس سے بہتہ نالے اور گندگی کے ڈھیر کا تاحال خاتمہ نہ ہوسکا۔ سکول کے سامنے لگے گندگی کے انبار نے  حکومتی نمائندوں کی غفلت پر کئی سوال کھڑے کردئیے۔

اسکول پرنسپل کا کہنا ہے کہ متعدد بار ڈی ایم سی آفس میں کمپلینز کیں کوئی سننے والا نہیں۔

بھاری بستے اٹھائے اسکول آتے طالبعلموں کو گندگی کے باعث پانی میں گرنے کا بھی ڈر رہتا ہے سکول آنے والے طلبہ کا کہنا ہے کہ بارش ہونے سے مشکلات مزید بڑھ جاتی ہیں۔

متعلقہ یونین کونسل کے وائس چیئرمین چوہدری اکرم نے یہ کہہ کر ہاتھ اٹھالیا کہ ان کی حکومت کو صرف 2ہی سال گزرے ہیں۔ ترقیاتی کاموں کے لیے پہلے بجٹ نہیں تھا اب کام شروع کیا ہے۔

حارث افضل  1 سال پہلے

متعلقہ خبریں