سوچنا ہوگا آئی ایم ایف کے پاس جانے کی نوبت کیوں آئی؟ وزیر خارجہ

ملتان (پبلک نیوز) وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ سوچنا ہوگا آئی ایم ایف کے پاس جانے کی نوبت کیوں آئی؟ پوری کوشش کی آئی ایم ایف کے بغیر ہی گزارہ ہو جائے۔ جب اقتدار سنبھالا تو پتہ چلا مالیاتی خسارہ خطرناک حد تک بڑھ چکا ہے۔ ماضی میں روپے کو مصنوعی طریقے سے کنٹرول کیا گیا۔

 

تفصیلات کے مطابق ملتان میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ  سوچنا ہوگا آئی ایم ایف کے پاس جانےکی نوبت کیوں آئی؟ کوشش کی آئی ایم ایف کے بغیر ہی گزارہ ہو جائے۔ گزشتہ حکومت بڑا معاشی بحران چھوڑ کر گئی۔ جب اقتدار سنبھالا تب مالیاتی خسارے کا پتہ چلا۔ مالیاتی خسارہ خطر ناک حد تک بڑھ چکا تھا۔

 

وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ ماضی میں روپے کو مصنوعی طریقے سے کنٹرول کیا گیا۔ کچھ قوتیں پاکستان میں استحکام نہیں دیکھنا چاہتی۔ سوچنا ہو گا دہشت گردی کیوں بڑھ رہی ہے؟ بھارت ایف 16 گرانے کا دعویٰ ثابت نہ کر سکا۔ پاکستان غیرذمہ دارانہ گفتگو نہیں کرنا چاہتا۔ پاکستان تحقیق کے بغیر کوئی بات نہیں کرے گا۔ گوادر واقعہ میں جو بھی ملوث ہوا اس کا تعاقب کریں گے۔

حارث افضل  2 ماه پہلے

متعلقہ خبریں