حکومت کو غیر مستحکم کرنے سے کوئی مسئلہ حل نہیں ہوتا:شاہ محمود قریشی

ملتان(پبلک نیوز) وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ کرپشن کا تدارک تحریک انصاف کے ایجنڈے کا ستون ہے۔ قومی خزانے کو نقصان پہنچانے والوں کا احتساب ضرور ہونا چاہیے۔ معاشی حالات میں بہتری آنا شروع ہو چکی ہے۔

 

وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے ملتان میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ گزشتہ 10سال میں لیے گئے ریکارڈ قرض کا ذمہ دار کون ہے؟ حکومت گرانا کسی مسئلے کا حل ہوتا تو کوئی حکومت نہ چل سکتی، با صلاحیت افسران حکومتی پالیسیوں کو پایہ تکمیل تک پہنچائیں گے۔ کرپشن کا تدارک تحریک انصاف کے ایجنڈے کا ستون ہے۔ معاشی حالات میں بہتری آنا شروع ہو چکی ہے، قومی خزانے کو نقصان پہنچانے والوں کا احتساب ضرور ہونا چاہیے۔

 

شاہ محمود قریشی نے کہا کہ حکومت کو غیر مستحکم کرنے سے کوئی مسئلہ حل نہیں ہوتا، دہشت گردی کے واقعات کی تحقیق کرنا ہو گی۔ بھارت کی طرح بغیر تحقیق بات نہیں کریں گے۔ ملک میں بیرونی سرمایہ کاری آرہی ہے۔ بھارتی انتخابات کے مراحل مکمل ہونے تک محتاط رہنا ہو گا۔ کوئٹہ میں خودکش حملہ واقعے میں معصوم لوگ جاں بحق ہوئے، دیکھنا ہے دہشت گردی کے پیچھے فرقہ واریت ہے یا کوئی غیر ملکی ہاتھ تاہم ہم بھارت کی طرح بغیر تحقیقات بات نہیں کریں گے۔

وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ کچھ قوتیں ہیں جو پورس کے ہاتھی ہیں، حکومت گرانا مسئلے کا حل ہوتا تو کوئی حکومت نہ چل سکتی۔ ٹرین مارچ کریں، سندھ مارچ کریں پنجاب آئیں یہ بلاول کا سیاسی حق ہے۔ افغان امن عمل کیلئے سہولت دے رہے ہیں۔ اگلی نشست دوحہ میں ہونی ہے ہماری کوشش ہے، نتیجہ خیز ہو، افغانستان کے اندرونی معاملات میں مداخلت کا ارادہ ہے نہ کیا ہے، ہم چاہتے ہیں افغانستان میں امن، استحکام اور خوشحالی آئے۔

 

وزیر خارجہ نے کہا کہ خارجہ اہداف کو عبور کریں گے۔ وزیراعظم عمران خان پہلے ایران اور اس کے بعد 25 تاریخ کو چین جائیں گے۔ چین کی قیادت کے ساتھ مذاکرات ہوں گے۔ ایک سوال پر شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ اسحاق ڈار نے ڈالر کی قیمت کو مصنوعی بریک لگا رکھے تھے، اسد عمر سمیت کوئی بھی چٹکی بجا کر حالات درست نہیں کر سکتا۔

عطاء سبحانی  1 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں