بھارت پاکستان میں ایک اور جارحیت کا منصوبہ بنا رہا ہے: شاہ محمود قریشی

ملتان(پبلک نیوز) وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ بھارت نے پلوامہ واقعہ کے بعد پاکستان پر الزامات کی بوچھاڑ کر دی۔ بھارت کا رویہ جارحانہ اور ہمارا مخلصانہ رہا۔ پاکستان زندہ قوم ہے اپنے دفاع کا حق محفوظ رکھتے ہیں۔

 

ملتان میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ قومی سلاتی کا معاملہ بہت سنجیدہ ہے۔ مودی سرکار نے سیاسی مقاصد کے لیے خطے کے امن کو داؤ پر لگایا۔ بھارت نے جنگی جنون کو ہوا دے کر خطے کے امن کو متاثر کیا۔ بھارت کشیدگی بڑھاتا رہا، پاکستان کم کرتا رہا۔ بھارت نے پلوامہ واقعہ کے بعد پاکستان پر الزامات کی بوچھاڑ کر دی۔ بھارتی جنگی جنون کے بادل ابھی پوری طرح چھٹے نہیں۔

 

وزیر خارجہ نے کہا کہ بھارت کی طرف سے پاکستان میں ایک اور جارحیت کا پلان ہے۔ بھارت پاکستان میں جارحیت کا ایک منصوبہ بنا رہا ہے۔ پلوامہ جیسا ایک اور واقعہ رونما کیا جا سکتا ہے۔ جنگ کے بادل اب بھی منڈلا رہے ہیں۔ 16سے 20 اپریل تک بھارت اور جارحیت کر سکتا ہے۔ واقعہ کا مقصد پاکستان پر سفارتی دباؤ بڑھانا ہو سکتا ہے۔ پلوامہ واقعہ کے بعد مقبوضہ کشمیر میں مظالم میں شدت آئی۔ عالمی طاقتیں خطے میں امن کے لیے کردارادا کریں۔

وزیرخارجہ شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ بھارت میں پاکستان پر حملے کی باتیں ہو رہی ہیں۔ اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل بھارتی رویے کا نوٹس لے۔ ہمارے پاس قابل اعتمادب خفیہ اطلاعات موجود ہیں۔ پاکستان مقبوضہ کشمیر کے ساتھ ہے اور ہمیشہ رہے گا۔ جتنے ایف 16طیارے تھے پاکستان کے پاس موجود ہے۔ بھارت کا رویہ جارحانہ اور ہمارا مخلصانہ رہا۔ پاکستان نے جذبہ خیر سگالی کے تحتب بھارت پائلٹ کو رہا کیا۔

 

شاہ محمود قریشی کا مزید کہنا تھا کہ بھارت کا بیانیہ عالمی سطح پر بے نقاب ہو چکا۔ بھارتی پائلٹ کی رہائی کے فیصلے کو عالمی دنیا نے سراہا۔ بھارت لائن آف کنٹرول پر معصوم شہریوں کو نشانہ بنا رہا ہے۔ پاکستان کل بھی امن کا قائل تھا آج بھی ہے۔ پاکستان زندہ قوم ہے اپنے دفاع کا حق محفوظ رکھتے ہیں۔ چاہتے ہیں بھارت حملے کی حماقت نہ کریں۔ عالمی برادری خاموش تماشائی بننے کے بجائے کردار ادا کرے۔

عطاء سبحانی  1 ہفتے پہلے

متعلقہ خبریں